پاکستانی فلمیں2018ء میں بھارتی فلموں سے زیادہ مقبول رہیں

پاکستانی فلمیں2018ء میں بھارتی فلموں سے زیادہ مقبول رہیں

 لاہور: مقبولیت اور بزنس کے اعتبار پاکستانی فلمیں بھارتی فلموں سے بہتر رہیں۔

سال 2018 ء ثقافتی سرگرمیوں کے حوالے سے پچھلے کئی سالوں کی نسبت کچھ بہتر رہا اس سال پاکستانی فلموں نے اچھا بزنس کیا بڑی تعداد میں ٹی وی ڈرامے بھی بنے سٹیج ڈراموں کا بزنس بھی کافی رہا ۔الحمراء بلاک اور پنجاب آرٹس کونسل کے زیر اہتمام سارا سال ثقافتی تقریبات کا سلسلہ بھی جاری رہا اس سال 17 پاکستانی فلمیں ریلیز ہوئیں جن میں سے ’’جوانی پھر نہیں آنی 2‘‘ پرواز ہے جنون، اور طیفا ان ٹرپل تو بہت ہی مقبول ہوئیں فلم جوانی پھر نہیں آنی2، نے 66 کروڑ 80 لاکھ، فلم پرواز ہے جنون نے 43 کروڑ اور فلم طیفا ان ٹرپل نے 41 کروڑ 44 لاکھ روپے کا بزنس کیا۔

اس سال نمائش ہونے والی بھارتی فلموں کی تعداد 22 ہے۔ جن میں سے سب سے زیادہ بزنس فلم سنجو نے کیا اور اس کا بزنس تقریباً 35 کروڑ دیا اس کے بعد پرماوتی نے 28 کروڑ اور باغی 2 نے 16 کروڑ کیا۔ یعنی پاکستان میں مقبولیت اور بزنس کے اعتبار پاکستانی فلمیں بھارتی فلموں سے بہتر رہیں۔

جوانی پھر نہیں آتی ہے نے 66 کروڑ 80 لاکھ روپے کا بزنس کرکے نہ صرف نیا ریکارڈ قائم کیا جبکہ گزشتہ برس ندیم بیگ کی فلم پنجاب نہیں جاؤں گی نے 51 کروڑ روپے کا بزنس کرکے ایک نیا ریکارڈ قائم کیا تھا

فلم جوانی پھر نہیں آنی 2 نے 66 کروڑ 80 لاکھ روپے کا بزنس کرکے اپنا ریکارڈ ہی توڑ دیا ہے۔ اس اعتبار سے پاکستانی فلموں نے پچھلے سال کی نسبت اس سال زیادہ بزنس کیا گیا یعنی اس سال پاکستان کی فلم انڈسٹری کے ترقی کے مضر میں تیزی آئی ہے۔ اب بیرون ملک بھی پاکستانی فلموں کی نمائش کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے اور تقریباً 20 ممالک میں پاکستانی فلمیں ریلیز ہو رہی ہیں۔ اس سال سعودی عرب میں پہلی بار پاکستانی فلم ریلیز ہوئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

ریڈ ہاٹ چلی پائپرز‘ نامی بینڈ میں شہنائی سے ملتا جلتا ایک ساز بجاتے ہیں

ریڈ ہاٹ چلی پائپرز‘ نامی بینڈ میں شہنائی سے ملتا جلتا ایک ساز بجاتے ہیں

سکاٹ لینڈ: وہ کہتے ہیں کہ جب بھی وہ کلٹ پہنتے ہیں تو خواتین انھیں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے