امریکی وفد کو بغیرتلاشی دیے چین میں داخلے کی اجازت نہیں ملی

جی 20 ممالک کے سربراہان کا اجلاس چین میں آج سے شروع ہو رہا ہے جس میں شرکت کے لیے امریکی صدر اپنے وفد کے ہمراہ چین کے شہر ”ہانگژو” پہنچے تھے تو امریکی صدر کے وفد نے حفاظتی حصار توڑ کر بغیر سیکیورٹی کلیئرنس دیے بغیرگذرنے کی کوشش کی جس پر چینی حکام نے انہیں روکا اور چینی قوانین کی پابندی کرنے کی تاکید اور بہ صورت دیگرسخت قوانین کی زد میں لانے کی تنبیہ بھی کی۔

جس کے بعد امریکی وفد میں شامل ایک ایک شخص نے خود کو چین کے قوانین کے تحت سیکیورٹی کلیئرنس کے لیے پیش کیا یہ سارا عمل امریکی صدر کی موجودگی میں ہوا اس دوران امریکی صدر اپنے طیارے میں ہی بیٹھے رہے۔

ذرائع کے مطابق امریکی صدر بارک اوباما کے وفد میں شامل صحافتی عملے کی جانب سے ایئرپورٹ کے حفاظتی حصار اورقوانین کو توڑنے کے بعد چینی افسران اوروائٹ ہاؤس عملے پربرہم ہوگئے اور ان کو متنبہ کیا کہ وہ امریکہ میں‌ نہیں چین میں موجود ہیں اس لیے انہیں تمام سیکیورٹی اور امیگریشن قوانین کی پاسداری کرنی ہوگی۔

یہ بھی پڑھیں

مقبوضہ بیت المقدس میں اسرائیلی فوج کی چوکی پر فائرنگ، فلسطینی خاتون شہید

مقبوضہ بیت المقدس میں اسرائیلی فوج کی چوکی پر فائرنگ، فلسطینی خاتون شہید

مقبوضہ بیت القدس:  قابض صہیونی فوج نے بدھ کو مقبوضہ بیت المقدس کے شمال میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے