,ٹیم ورک, کے, بغیر, پاکستان ,میں, سرمایہ کاری ,نہیں ,آسکتی، عمران خان

ٹیم ورک کے بغیر پاکستان میں سرمایہ کاری نہیں آسکتی، عمران خان

اسلام آباد:  وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ہمیں ٹیم چاہیے کیونکہ ٹیم ورک کے بنا پاکستان میں سرمایہ کاری نہیں آسکتی۔

اسلام آباد میں سفرا کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ اوورسیز پاکستانیوں کیلئے آسانیاں پیدا کی جائیں۔ منی لارںڈنگ کا پیسہ واپیس لانے کی کوشش کررہے ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ قوم تب اٹھتی ہے جب وہ یقین کرنا شروع کرے اور ہم قومی غیرت کی بات کرتے ہیں تو مذاق اڑایا جاتا ہے۔ موجودہ صورتحال ہمارے لیے بہترین موقع ہے، اب پاکستان ایسے نہیں چل سکتا۔

عمران خان نے کہا کہ ہمیں عوام کی سوچ بدلنی ہوگی اور دوسروں پر انحصار کرنے کی  پالیسی ختم کرنی ہوگی۔ بڑے بڑے پیسے والے لوگ قرض لے کرتباہ ہوگئے۔

وزیراعظم نے کہا کہ قرض لینے کی وجہ سے زائد آمدن اورخرچے کم نہ کرنا ہے۔ قرض لینے سے صرف امیر طبقہ فائدہ اٹھا لیتا تھا۔

عمران خان نے مزید کہا کہ ہمارے فیصلوں سے صرف شارٹ ٹرم فائدہ ہوا، جبکہ غلط فیصلوں سے ہمارا معاشرہ تباہ ہوگیا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ‘دوسروں پر انحصار پر بنائی گئی پالیسی سے نقصان پہنچا، سیٹو، سینٹو اور امریکا سے امداد نہ آئی تو ملک تباہ ہوجائے اور انحصار کے تحت خارجہ پالیسی بنائی گئی اور ہماری قیادت نے فیصلے اس بنیاد پر کیے کہ امداد کہاں سے آئے گی اور ہمیں آئی ایم ایف سے قرضہ کیسے ملے گا’۔

اسلام آباد میں گونگے، اندھے اور بہرے لوگ رہتے ہیں، آصف علی زرداری

انہوں نے کہا کہ دوسروں پر انحصار کی پالیسی سے بہت نقصان ہوا اس لیے دوسروں پر انحصار کی پالیسی کو ترک کرنا پڑے گا۔

عمران خان نے کہا کہ ‘جب ہمارے پاس خسارہ بڑھنے لگا تو ملک میں آمدنی بڑھانے کے بجائے قرض لینے یا امداد لینے کا شارٹ کٹ لیا جس سے ہم نے اپنی خومختاری بھی کھو دیا اور ہماری غیرت اور خود داری ختم ہوگئی’۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘ملک کو ٹھیک کرنے کے لیے بنیادی ڈھانچے میں تبدیلی نہیں کر سکے اور قوم کی تعمیر بھی نہیں ہوئی اور ملک میں جتنے بھی مسائل آئے ہیں وہ اسی ذہنیت کی وجہ سے آئے ہیں اس لیے ضروری ہے کہ ذہنیت میں تبدیلی آئے’۔

وزیراعظم نے کہا کہ ‘ذہنیت میں تبدیلی لانے اس لیے ضروری ہے کیونکہ باہر ہماری ایک بری تصویر ہے’۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘ایران میں خمینی کے انقلاب کے بعد مغرب میں اسلامی بنیاد پرستوں کی اصطلاح آئی اس کے بعد نائن الیون اور اس سے قبل بھی میں نے دیکھا کہ ہماری قیادت خود ہمارے وزرااعظم باہر جاکر دنیا کو یہ کہتے تھے کہ میں ہوں لبرل اور اب مجھے بچالو ورنہ یہاں سارے بنیاد پرست آئیں گے اور ڈراتے تھے’۔

یہ بھی پڑھیں

صدر مملکت نے چاروں گورنر اورعلماء کی ویڈیو کانفر نس آج

صدر مملکت نے چاروں گورنر اورعلماء کی ویڈیو کانفر نس آج

اسلام آباد: حکومت نے مساجد کیلئے ایس اوپیز کا از سرنو جائزہ لینے کا فیصلہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے