ataullah-khan-esakhelvi

نہ مجھے اور نہ عمران خان کو مال کی ہوس ہے

لاہور:  معروف گلوکار عطاء اللہ خان عیسیٰ خیلوی نے کہاوزیر اعظم سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ کلچر کی بحالی کی طرف توجہ دیں۔

میں عمران خان کا سپاہی تھا اور سپاہی ہوں ، مجھےکسی چیز کی ہوس نہیں اور نہ ہی وزارتیں میرے لیے کوئی اہمیت رکھتی ہیں

مجھے گانے کا شوق تھا بچپن سے ہی گنگناتا تھا اور سکول میں میرے اساتذہ مجھے قومی ترانہ پیش کرنے کے لئے کہتے تھے اور میں قومی ترانہ سنایا کرتا تھا،مجھے گانے کی اے بی سی بھی نہیں آتی،آج بھی سیکھ رہا ہوں۔،میں نے بنیادی طورپر کسی سے گانا نہیں سیکھا اور نہ ہی کسی کو دیکھ کر مجھے گانے کا شوق پیدا ہوا

حقیقی معنوں میں مجھے شہرت 1978ء میں فیصل آباد کی کیسٹ کمپنی نے میرا گانا ’’دل لگایا تھا دل لگی کے لئے، بن گیا روگ زندگی کے لئے ‘‘سے ملی اور پھر ’’قمیض تیری کالی‘‘ نے تہلکہ مچا دیا ۔

عطاء اللہ عیسیٰ خیلوی نے کہا کہ میری عمران خان کے ساتھ 35سالوں سے وابستگی ہے ، جب عمران خان نے اپنی سیاست کا آغاز کیا اور پی ٹی آئی کی بنیاد رکھی تو میں نے اپنی اہلیہ سے مشورہ کیا کہ عمران خان سیاست میں آگئے ہیں اور اب میں ان کے لئے کیا کر سکتا ہوں ؟جس پر اہلیہ نے مشورہ دیا کہ آپ ان کیلئے ترانہ بنائیں اور خدا کے فضل سے وہ اس قدر مقبول ہوا جو آج بھی بچے بچے کی زبان پر ہے ۔

نہ مجھے اور نہ عمران خان کو مال کی ہوس ہے،یہ اللہ کی ذات کا سب سے بڑا احسان ہے ،جس مقام پر آج ہوں یہ اللہ کا فضل ہے اور میں بہت خوش ہوں، وزارتیں اور عہدے میرے لیے کوئی اہمیت نہیں رکھتے

یہ بھی پڑھیں

ریڈ ہاٹ چلی پائپرز‘ نامی بینڈ میں شہنائی سے ملتا جلتا ایک ساز بجاتے ہیں

ریڈ ہاٹ چلی پائپرز‘ نامی بینڈ میں شہنائی سے ملتا جلتا ایک ساز بجاتے ہیں

سکاٹ لینڈ: وہ کہتے ہیں کہ جب بھی وہ کلٹ پہنتے ہیں تو خواتین انھیں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے