انڈونیشیا میں سونامی نے تباہی مچادی، 132 افراد ہلاک اور 600 زخمی

انڈونیشیا میں سونامی نے تباہی مچادی، 132 افراد ہلاک اور 600 زخمی

جکارتہ

انڈونیشیا میں ہلاکت خیز سونامی نے تباہی مچا دی جس کی زد میں آکر 132 افراد ہلاک جب کہ 600 افراد زخمی ہو گئے۔

بین الاقوامی خبررساں ادارے کے مطابق انڈونیشیا کے آبنائے سندا میں آتش فشاں پھٹنے کے بعد جب بڑی بڑی چٹانیں سمندر میں گریں تو سونامی رونما ہوا جس نے ساحلی علاقوں میں تباہی مچا دی جس کے نتیجے میں 132  افراد ہلاک اور 600 زخمی ہو چکے ہیں۔ سونامی کے بعد امدادی کاموں کے دوران لاشیں ملنے کا سلسلہ تاحال جاری ہے۔

انڈونیشن حکام کے مطابق سونامی کے باعث شہر کی کئی عمارتیں ملبے کا ڈھیر بن چکی ہیں جب کہ ہلاکتوں اور زخمیوں کی تعداد بڑھنے کا خدشہ ہے۔ انہوں نے بتایا کہ سڑکوں اور گلیوں میں لاشیں بکھری پڑی ہیں، اسپتال زخمیوں سے بھرگئے ہیں جب کہ متاثرین کو خوراک، ادویات اور پینے کے پانی کی کمی کا سامنا ہے۔

انڈونیشین حکام نے بتایا کہ آبنائے سندا میں آتش فشاں پھٹنے سے دیو قامت سمندری لہریں پیدا ہوئیں جب کہ طوفان سے سماٹرا اور جاوا کےعلاقے زیادہ متاثرہوئے ہیں۔

واضح رہے کہ انڈونیشیا میں 26 دسمبر2004 میں بھی تاریخ کا ہلاکت خیزسونامی آیا تھا جس میں ایک لاکھ سے زائد افراد اپنی جانوں سے گئے تھے اس کے باوجود انڈونیشیا نے احتیاطی تدابیراورہنگامی صورت حال سے نمٹنے کے لیے خاطر خواہ اقدامات نہیں کیے گئے جس کا خمیازہ اس بار کے سونامی میں بھگتنا پڑا۔

فلسطینی صدر محمود عباس نے پارلیمنٹ تحلیل کردی

یہ بھی پڑھیں

کرونا وائرس ٹیسٹ کے لیے گئے وقت پر دو بار نہ جانے پر تیسری بار بکنگ دو ہفتے تک نہیں ملے گی

کرونا وائرس ٹیسٹ کے لیے گئے وقت پر دو بار نہ جانے پر تیسری بار بکنگ دو ہفتے تک نہیں ملے گی

ریاض: سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی وزارت صحت کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے