پشاور میں چار شدت پسند ہلاک

فوج کے شعبۂ تعلقات عامہ کے ترجمان لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے ایک ٹویٹ میں بتایا ہے کہ کرسچن کالونی پر حملہ کے بعد سکیورٹی فورسز نے بروقت کارروائی کی اور ’چاروں خودکش حملہ آور مارے گئے ہیں، علاقے میں تلاشی کا عمل جاری ہے۔‘

آئی ایس پی آر نے بتایا ہے کہ حملہ آور صبح کے وقت اسلحے اور گولہ بارود کے ہمراہ کرسچن کالونی میں داخل ہوئے اور پہلے سکیورٹی گارڈ کو نشانہ بنایا۔ حملے کے فوراً بعد سکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا اور فائرنگ کے تبادلے میں حملہ آوروں کو ہلاک کر دیا گیا۔

فائرنگ کے تبادلے میں دو ایف سی، ایک پولیس، دو سویلین سکیورٹی گارڈ زخمی ہوئے ہیں۔

کالونی کے گھروں میں تلاشی کا عمل جاری ہے۔ علاقے کی فضائی نگرانی بھی کی جا رہی ہے۔

حملہ جمعے کی صبح سویرے کیا گیا اور کالونی میں مزید ممکنہ حملہ آوروں کی تلاش کے لیے سرچ آپریشن جا رہی ہے۔

خیال رہے کہ پشاور میں شدت پسند پہلے متعدد بار عام شہریوں اور سکیورٹی اہلکاروں کو نشانہ بنا چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

لیویز اور, خاصہ داروں ,کو پولیس میں, ضم کرنے کا, نوٹیفیکیشن جاری

لیویز اور خاصہ داروں کو پولیس میں ضم کرنے کا نوٹیفیکیشن جاری

پشاور: وزیراعلیٰ کے پی محمود خان نے کہا کہ لیویز اور خاصہ داروں کو پولیس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے