,بیلجیم, کے, وزیر اعظم, چارلس مشیل ,مستعفی

بیلجیم کے وزیر اعظم چارلس مشیل مستعفی

برسلز: بیلجیم کے وزیر اعظم چارلس مشیل مہاجرین سے متعلق معاہدے پر اختلاف کے باعث اپنے عہدے سے مستعفی ہوگئے ہیں۔

بیلجیئم کے وزیراعظم چارلس مشیل نے ملک کے بادشاہ فلپ کو اپنا استعفی پیش کر دیا ہے، وزیراعظم کی اتحادی حکومت کو اقوام متحدہ کے مہاجرین سے متعلق معاہدے پر ٹوٹ پھوٹ کا سامنا تھا۔ مہاجرین کے معاملے پر وزیراعظم چارلس مشیل کے خلاف حزب اختلاف کی جماعتوں نے عدم اعتماد کی تحریک پیش کرنے کا بھی اعلان کیا تھا جبکہ چار جماعتوں کے حکومتی اتحاد میں شکست وریخت کی جانب گامزن تھا۔

بیلجیئم کے بادشاہ فلپ نے تاحال وزیراعظم کا استعفیٰ منظور نہیں کیا ہے۔ بادشاہ فلپ استعفیٰ منظور کرنے کے ساتھ وزیراعظم سے آئندہ برس مئی میں ہونے والے انتخابات تک عبوری طور پر حکومتی انتظام چلانے کی درخواست بھی کر سکتے ہیں۔

آرمی چیف سے امریکی نمائندہ خصوصی برائے افغانستان زلمے خلیل کی ملاقات

مراکش میں اقوام متحدہ کے ساتھ طے پانے والے مہاجرین معاہدے پر دستخط کے بعد وزیراعظم چارلس مشیل کے دیرینہ ساتھی حکومتی اتحاد سے علیحدہ ہوگئے تھے اور اپوزیشن نے بھی معاہدے پر کمزور حکومتی اتحاد کی حمایت سے انکار کردیا تھا۔

واضح رہے کہ چارلس مشیل نے 38 سال کی عمر میں اکتوبر 2014 میں وزیراعظم کے عہدے کا حلف اُٹھا کر بیلجیئم کی تاریخ کے سب سے کم عمر وزیراعظم ہونے کا اعزاز حاصل کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

کرونا وائرس ٹیسٹ کے لیے گئے وقت پر دو بار نہ جانے پر تیسری بار بکنگ دو ہفتے تک نہیں ملے گی

کرونا وائرس ٹیسٹ کے لیے گئے وقت پر دو بار نہ جانے پر تیسری بار بکنگ دو ہفتے تک نہیں ملے گی

ریاض: سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی وزارت صحت کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے