کام نہ ملنے پر بھارتی گلوکار سونو نگم مایوسی کا شکار

کام نہ ملنے پر بھارتی گلوکار سونو نگم مایوسی کا شکار

ممبئی: بالی ووڈ انڈسٹری میں پاکستانی گلوکاروں کی بڑھتی ہوئی مانگ سے بھارتی گلوکار پریشانی کا شکار۔

سونو نگم کا کہنا ہے کہ مجھے بھارتی ہونے پر مایوسی ہونے لگی اور دل چاہتا ہے کہ کاش میں پاکستانی ہوتا تو پھر مجھے خود بہ خود کام ملنے لگا اور منہ مانگی رقم بھی فراہم کی جاتی۔

بھارتی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سونو نگم کا کہنا تھا کہ ’بالی ووڈ انڈسٹری میں مقامی گلوکاروں کو ترجیح دینے کے بجائے میوزک کمپوزرز پاکستانی گلوکاروں کو مواقع فراہم کرتے ہیں۔ ہدایت کار اپنی فلم میں مقامی گلوکاروں کا گانا شامل کرنے کے لیے پیسے لیتے ہیں جبکہ وہ پاکستانی گلوکاروں کے ساتھ آسان شرائط پر کام کرتے ہیں جو ہم سب کے لیے تکلیف دہ ہے۔

اگر یہی رویہ چلتا رہا تو بھارت سے گلوکاری ہمیشہ کے لیے ختم ہوجائے گی اور یہاں کوئی بھی شخص گانا گانے کو ترجیح نہیں دے گا۔

پاکستانی گلوکار راحت فتح علی اورعاطف میرے بہت اچھے دوست ہیں، یہی وجہ ہے کہ میں اُن کے ساتھ بغیر فیس کے بھی پروگرام کرلیتا ہوں

یہ بھی پڑھیں

ریڈ ہاٹ چلی پائپرز‘ نامی بینڈ میں شہنائی سے ملتا جلتا ایک ساز بجاتے ہیں

ریڈ ہاٹ چلی پائپرز‘ نامی بینڈ میں شہنائی سے ملتا جلتا ایک ساز بجاتے ہیں

سکاٹ لینڈ: وہ کہتے ہیں کہ جب بھی وہ کلٹ پہنتے ہیں تو خواتین انھیں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے