اب کیا جیل سے کراچی کے مسائل ہوں گے

وسیم اختر کی حلف برادی پر ردعمل دیتے ہوئے رہنما تحریک انصاف علی زیدی نے کہا کہ میئرکراچی پر کسی کو نادانستگی کی بنا پر کسی گاڑی کو ٹکر مارنے کا الزام نہیں ہے یا معمولی نوعیت کے مقدمات نہیں بلکہ دہشت گردی کے سنگین الزامات ہیں جس کا سامنے کے لیے وہ جیل میں ہیں ایسے شخص کو کراچی کی کنجی دینے کا کیا مطلب ہے۔اور اب کیا لوگ اپنے مسائل کئ حل کے لیے جیل جایا کرے گا صرف پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگانے سے سارے مقدمات ختم ہو جاتے ہیں؟

امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے اپنا ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ میئر کراچی کے ڈھائی کروڑ کی آبادی والے شہر کے میئر ہیں اس شہرکے مسائل پہلے ہی کھمبیر صورت حال اختیار کر چکے ہیں جن کے حل کے لیے ایک متحرک اور گراؤنڈ پر موجود میئر کی ضرورت ہو گی نہ جیل میں مقید میئر کی ؟

واضح رہے رہنما تحریک انصاف علی زیدی اور امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمٰن اپنی جماعت اہنی جماعت کی جانب سے میئر کراچی اور ڈپٹی میئر کے نمائندے تھے تا ہم بلدیاتی الیکشن کے پہلے ہی مرحلے میں دونوں اپنے اپن حلقوں سے یوسی چیئرمین کے الیکشن ہار گئے تھے اور میئر کراچی و ڈپٹی میر کراچی کے انتخاب سے باہر ہو گئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں

اگر نیب قوانین پر عملدرآمد نہیں کرتا تو اپنے ایس او پی ختم کردے

اگر نیب قوانین پر عملدرآمد نہیں کرتا تو اپنے ایس او پی ختم کردے

کراچی: 2016 سے انکوائری زیر التواء ہونے پر چیف جسٹس نیب حکام پر برہم ہوگئے۔ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے