یمن سے متعلق امن مذاکرات کا سوئیڈن میں آغاز

یمن سے متعلق امن مذاکرات کا سوئیڈن میں آغاز

سعودی حکومت کی طرف سے گذشتہ کئی مہینے سے کھڑی کی جانے والی رکاوٹوں کے بعد سرانجام یمن سے متعلق امن مذاکرات سوئیڈن میں شروع ہو گئے۔

اسٹاک ہوم میں یمنی گروہوں کے درمیان مذاکرات شروع ہو گئے ہیں۔ اس سے پہلے یمن کے امور میں اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے مارٹن گریفتھس اور سوئیڈن کے وزیر خارجہ نے ایک پریس کانفرنس کو بھی خطاب کیا-

صنعا ہوائی اڈے اور الحدیدہ بندرگاہ کو کھول دیا جانا، محاصرے کا خاتمہ، سرکاری ملازمین کی تنخواہوں کی ادائیگی اور انسان دوستانہ امداد کی ترسیل اس دور کے مذاکرات کے اہم ترین موضوعات ہیں-

یمن کے امور میں اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے مارتین گریفتھس نے نامہ نگاروں سے گفتگو کے دوران کہا کہ دو سال سے زائد عرصے سے مذاکراتی عمل کے تعطل کے بعد یمن میں جنگ کو روکنے اور ایک پرامن حل تلاش کرنے کی کوشش کے تحت دوبارہ مذاکرات کی میز پر بیٹھ رہے ہیں-

اقوام متحد کے خصوصی نمائندے نے خبردار کیا کہ بھوک اور حفظان صحت کی انتہائی خراب صورتحال نے یمن میں ایک بحران پیدا کر دیا ہے-

یمن سے متعلق صلح مذاکرات چھے ستمبر کو جنیوا میں شروع ہونے والے تھے لیکن سعودی عرب کی مخالفتوں کی بنا پر یہ مذاکرات ملتوی ہو گئے تھے-

ماہرہ خان، عالیہ بھٹ سے زیادہ پرکشش اور دلکش ترین خاتون ثابت

یہ بھی پڑھیں

سعودی وزیرِ خارجہ نے کشمیر کے سوال پر بھارتی صحافی کا منہ بند کرا دیا

سعودی وزیرِ خارجہ نے کشمیر کے سوال پر بھارتی صحافی کا منہ بند کرا دیا

نئی دہلی: سفارتی محاذ پر بھارت کو ایک اور دھچکا پہنچا ہے، سعودی وزیرِ خارجہ نے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے