,سپریم کورٹ ,ماڈل ٹاؤن, کیس, کل, سماعت ,کیلئے ,مقرر، نوازشریف ,سمیت, دیگر ,کو, نوٹسز ,جاری

سپریم کورٹ: ماڈل ٹاؤن کیس کل سماعت کیلئے مقرر، نوازشریف سمیت دیگر کو نوٹسز جاری

اسلام آباد: سپریم کورٹ میں سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس کی سماعت کل ہوگی۔

سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس کی سماعت کے لیے چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں 5 رکنی لارجر بینچ تشکیل دے دیا گیا جو کل دوپہر 12 بجے سماعت کرے گا۔

عدالت نے سماعت کے سلسلے میں نوازشریف، شہبازشریف، حمزہ شہباز اور  سعد رفیق کو نوٹس جاری کردیئے۔

اس کے علاوہ چوہدری نثار، پرویز رشید، خواجہ آصف، عابد شیر علی، راناثناءاللہ، اٹارنی جنرل اور ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کو بھی نوٹس جاری کیے گئے ہیں۔

واضح رہےکہ سپریم کورٹ میں سانحہ ماڈل ٹاؤن کی گزشتہ سماعت پر پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ طاہرالقادری عدالت میں پیش ہوئے تھے اور کیس کی نئے جے آئی ٹی بنانے کی استدعا کی تھی۔

سماعت کے بعد عدالت نے نئیمشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) کی تشکیل کے لیے لارجر بینچ تشکیل دیا تھا۔

لارجر بینچ میں چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار اور جسٹس آصف سعید کھوسہ سمیت 5 جج صاحبان شامل ہیں۔

چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ لارجر بینچ میں دیگر صوبوں کی نمائندگی بھی ہوگی، جو 5 دسمبر سے کیس کی سماعت کرے گا۔

وزیراعظم عمران خان کی سینیئر صحافیوں اور اینکر پرسن سے خصوصی گفتگو

سانحہ ماڈل ٹاؤن کا پس منظر

17 جون 2014 کو لاہور کے علاقے ماڈل ٹاؤن میں پاکستان عوامی تحریک (پی اے ٹی) کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری کی رہائش گاہ کے سامنے قائم تجاوزات کو ختم کرنے کے لیے پولیس کی جانب سے آپریشن کیا گیا۔

پی اے ٹی کے کارکنوں کی مزاحمت اور پولیس آپریشن کے نتیجے میں 14 افراد جاں بحق ہوئے، جن میں خواتین بھی شامل تھیں جبکہ پولیس کی فائرنگ سے درجنوں افراد زخمی بھی ہوئے۔

پنجاب حکومت کی جانب سے واقعے کی تحقیقات کے لیے جے آئی ٹی بنائی گئی جس کی رپورٹ بھی منظرعام پر آچکی ہے۔

یاد رہے کہ سپریم کورٹ نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کے متاثرین کو فراہمی انصاف میں تاخیر کا نوٹس بھی لے رکھا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

مولانا فضل الرحمٰن کی جانب سے تجویز کردہ مارچ سے کسی دباؤ کا شکار نہیں

مولانا فضل الرحمٰن کی جانب سے تجویز کردہ مارچ سے کسی دباؤ کا شکار نہیں

اسلام آباد:وزیراعظم سے ملاقات کرنے والے علما میں اسلامی نظریاتی کونسل (سی آئی آئی)، متحدہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے