پشاور : پولیس نے مفتی محمود فلائی اوور پر رکھا دستی بم ناکارہ بنا دیا

پشاور : پشاور پولیس نے شہر کے حساس علاقے میں مفتی محمود فلائی اوور پر رکھا دستی بم ناکارہ بنا دیا۔ بم ناکارہ بنانے کیلئے مخصوص لباس اور آلات استعمال کرنے کے بجائے اہلکاروں نے ایک بار پھر خطرات سے کھیلنے کا انداز اپنایا۔

تفصیلات کے مطابق خطرناک ایف ون دستی بم برآمد ہوا تو مفتی محمود فلائی اوور کو ٹریفک کےلئے بند کر دیا گیا۔ پولیس کے مطابق دستی بم کسی گاڑی یا کسی کے پاﺅں سے ٹکرانے کے بعد پھٹ سکتا تھا مگر جب اس خطرناک بم کو ناکارہ بنانے کا مرحلہ آیا تو بم ڈسپوزل یونٹ کا انتظار کئے بغیر دو پولیس اہلکاروں کوآگے بھیج دیا گیا۔ جان ہتھیلی پر رکھنے والے ان دونوں اہلکاروں کے اس کارنامے کو بہادری سمجھا جائے یا بے وقوفی؟ پولیس حکام کے پاس بھی اس سوال کا تسلی بخش جواب نہیں تھا۔

ایک دھماکے یا بم کی برآمدگی کے بعد فوری طور پر دوسرے دھماکے کا خدشہ موجود رہتا ہے۔ اس کے باوجود مفتی محمود فلائی اوور کو کلیئر کرنے سے قبل ہی پل پر پولیس اہلکار اور میڈیا نمائندے جمع ہو گئے۔ ماضی کے واقعات سے سبق نہ سیکھتے ہوئے جان ہتھیلی پر رکھ کر صرف اپنی مہارت پر بھروسہ کرنا محکمہ پولیس کے پاس موجود جدید سہولتوں پرکئی سوالات اٹھا رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

ڈاکٹرز, کی ہڑتال, کے, باعث شہریوں کو, شدید پریشانی, کا سامنا

ڈاکٹرز کی ہڑتال کے باعث شہریوں کو شدید پریشانی کا سامنا

 پشاور: ڈاکٹرز کی ہڑتال کے باعث شہریوں کو شدید پریشانی کا سامنا ہے، سرکاری اسپتالوں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے