کرک میں آئل فیلڈ سے 100 ارب روپے کا تیل چوری

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے پٹرولیم و قدرتی وسائل کا اجلاس ملک امتیاز خان کی صدارت میں ہوا، اجلاس میں انکشاف کیا گیا کہ خیبر کے ضلع کرک کی آئل فیلڈ سے اربوں روپے مالیت کا خام تیل چوری کیا گیا۔

ایف آئی اے کے ڈائریکٹر نے اپنی تحقیقات سے کمیٹی کو آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ کرک کی آئل فیلڈ سے چوری کے حوالے سے شکایات سامنے آئی تھیں کہ تین طرح سے آئل چوری کیا گیا۔

ایف آئی اے نے بتایا کہ غیر ملکی آئل کمپنی کے خلاف سو ارب روپے خام تیل چوری کرنے کی تحقیقات جاری ہیں، اب تک ڈیڑھ سو افراد خام تیل چوری کے الزام میں گرفتار کیے جاچکے ہیں، اس چوری میں حکومت اور وزارت پٹرولیم کے اعلیٰ افسران سے لے کر چھوٹے افسران تک ملوث ہیں۔

ملک امتیار نے کہا کہ ایسی کمپنی کو بلیک لسٹ کیوں نہیں کرتے، قائمہ کمیٹی نے آئندہ اجلاس میں کمپنی کے حکام سمیت متعلقہ دیگر ڈیپارٹمنٹ کو وضاحت کے لئے طلب کرلیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

جولائی میں ملکی برآمدات میں 14 فیصد اضافہ ہوا

اسلام آباد: رواں سال جولائی میں ملکی برآمدات میں 14 فیصد اضافہ ہوا، ملکی برآمدات …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے