داعش کے ڈیتھ سکواڈکی نئی ویڈیو جاری،قاتلوںمیں 12سالہ برطانوی بچہ بھی شامل

عراق وشام میں موجود شدت پسند تنظیم داعش کی جانب سے سفاکیت سے بھرپور ویڈیوز جاری کیا جانا معمول کی با ت ہے جس میں وہ مختلف طریقوں سے قیدیوں کو انتہائی دردناک موت دے کر اپنی سفاکیت کا ثبوت دنیا کو فراہم کرتے ہیں۔حال ہی میں شدت پسند تنظیم نے ایک اور ویڈیو جاری کی ہے جس میں داعش کے ڈیتھ سکواڈ کے پانچ ’بچوں‘نے پانچ قیدیوں کو قتل کیا ہے۔

مذکورہ پانچ داعشی بچوں میں ایک ابو عبداللہ البریطانی (برطانیہ)بھی شامل ہیں جن کی عمرلگ بھگ 12سال ہو گی۔نیلی آنکھوں والے اس گورے بچے نے بھی اپنے دیگر ساتھیوں کی طرح سامنے گھٹنوں کے بل بیٹھے قیدی کو گولی مار کر ہلاک کیا۔ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ داعش کے ڈیتھ بریگیڈ کے رکن اس بچے نے کامیابی کے ساتھ گولی چلائی اور وہ عربی اور انگریزی زبان اچھی طرح بولتا ہے۔

داعش کے زیرکنٹرول شامی شہر الرقہ میں حال ہی میں ریکارڈ کی جانے والی اس وڈیو سے ظاہر ہوتا ہے کہ ڈیتھ بریگیڈ مختلف شہریت رکھنے والے 5 بچوں پر مشتمل ہے۔مقتول قیدیوں نے نارنجی رنگ کا یونیفارم پہن رکھا تھا۔ویڈیو کلپ میں بچے شام میں موجود کردوں کے خلاف نعرے لگا رہے ہیں۔اس کے بعد انہوں نے ” اللہ اکبر” کا نعرہ بلند کر کے اپنے پستولوں سے قیدیوں کے سروں میں پیچھے سے گولیاں ماریں۔

یہ بھی پڑھیں

روس کا کیمیائی ہتھیاروں کی نابودی کے لیے لازمی اقدامات پر زور

روس کا کیمیائی ہتھیاروں کی نابودی کے لیے لازمی اقدامات پر زور

روس نے کیمیائی ہتھیاروں پر پابندی کے عالمی معاہدے کے رکن ملکوں کے درمیان تعمیری …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے