وزیر اعظم عمران خان کی نجی. رہائش گاہ. کو ریگولرائز کرنے. کا عمل. روک دیا

وزیر اعظم عمران خان کی نجی رہائش گاہ کو ریگولرائز کرنے کا عمل روک دیا

اسلام آباد: سرکاری ادارے کی جانب سے وزیر اعظم کو بتایا گیا ہے کہ جب تک وہ مطلوبہ دستاویزات فراہم نہیں کرتے، ان کے گھر کی ریگولرائزیشن کا معاملہ مزید آگے نہیں بڑھ سکتا

سی ڈی اے کی جانب سے 20 نومبر کو لکھے گئے خط میں کہا گیا کہ گھر کی ریگولرائزیشن کے لیے دی گئی وزیر اعظم کی درخواست میں کئی چیزیں موجود نہیں ہیں۔
عمران خان نے اپنی درخواست اور دستاویز میں تحصیل دار کی جانب سے جاری کردہ حقداران زمین (فرد) رجسٹر کی تصدیق شدہ نقل فراہم نہیں کی بلکہ صرف جمائمہ خان کے نام کی پرانی فرد انتقال کی نقل فراہم کی گئی اور عمران احمد خان نیازی کے نام کی ملکیت کا کوئی ثبوت پیش نہیں کیا گیا۔
خط میں کہا گیا کہ ریگولرائزیشن کے عمل کے لیے مالک (عمران خان) کے کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈ کی مصدقہ نقل ضروری ہے جبکہ کیس کو دیکھنے والے شخص کے پاس مالک (عمران خان) سے اتھارٹی لیٹر لینا بھی ضروری ہے۔
سی ڈی اے کی جانب سے کہا گیا کہ وزیر اعظم عمران خان نے عمارت کے غیردستخط شدہ خاکے جمع کرائے جو ریگولرائزیشن کے عمل کے لیے قابل قبول نہیں تھے۔
ساتھ ہی سرکاری ادارے نے درخواست گزار سے کہا کہ وہ ساختی ڈرائنگ اور ڈیزائن سمیت ساختی مضبوطی اور استحکام کے حوالے سے سی ڈی اے کے نامزد کردہ انجینئر کی جانب سے جاری کردہ سرٹیفکیٹ پیش کرے، اس کے علاوہ سی ڈی اے کی جانب سے درخواست گزار سے نکاسی اور سولڈ ویسٹ منیجمنٹ کے لیے پلان پیش کریں۔
خط کے مطابق ادارے نے تحصیل دار سے ملکیت کے حوالے سے قبضے کی تصدیق کے لیے اکس شجرہ کی مصدقہ نقل بھی مانگی۔
اس کے علاوہ تحصیل دار سے ایک سرٹیفکیٹ اور سائٹ پلان ضروری ہے جو موجودہ ریونیو روڈ تک رسائی ظاہر کرے، اگر ریونیو روڈ سے سائٹ کے لیے رسائی نہیں ملتی تو ریونیو روڈ سے سائٹ تک موجود روڈ کیپیٹل ایڈمنسٹریشن کے نام پر منتقل ہوجائے گا۔
وزیر اعظم کو یہ بھی کہا گیا کہ سی ڈی اے کی جانب سے مقرر کردہ منتقلی اور ڈیولپمنٹ چارجز جمع کرانے کے لیے حلف نامہ جمع کرائیں۔
اس حوالے سے لیٹر میں کہا گیا کہ ’ آپ (عمران خان) کو تجویز دی گئی کہ وہ اس درخواست کی وصولی کے 7 دن کے جواب دیں تاکہ قانون کے مطابق آپ کے گھر کی ریگولرائزیشن سے متعلق فیصلے کو دیکھا جاسکے‘۔

یہ بھی پڑھیں

جیل میں صرف جیل مینوئل کے مطابق سہولیات فراہم کی جارہی ہیں

جیل میں صرف جیل مینوئل کے مطابق سہولیات فراہم کی جارہی ہیں

راولپنڈی: مہناز سعید کا مزید کہنا تھا کہ جیل میں انہیں غیر قانونی سہولیات فراہم …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے