تجاوزات ختم کر بھی, دیں تو, سرکلر ریلوے, فوری بحال نہیں, ہوسکتا

تجاوزات ختم کر بھی دیں تو سرکلر ریلوے فوری بحال نہیں ہوسکتا

کراچی: صوبائی وزیر بلدیات سعید غنی کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کے حکم پر تجاوزات کا خاتمہ کیا جارہا ہے، لوگوں نے نالوں اور مارکیٹوں پر قبضے کر رکھے تھے

سرکلر ریلوے سے تجاوزات کا خاتمہ ہم نے ماضی میں شروع کیا تھا اور متاثرین کی ری سیٹلمنٹ کی تیاری کی تھی۔ ان کا کہنا تھا کہ ریلوے نے خود لکھ کر کہا کہ جو زمین سندھ حکومت خالی کروائے گی اسے فی الحال محفوظ رکھنے کی ریلوے کے پاس استعداد نہیں ہے لہذا یہ کام ریلوے نے خود رکوایا تھا۔
سعید غنی نے کہا کہ سر کلر ریلوے کو چلانے کے لیے صرف تجاوزات مسئلہ نہیں ہے، اسے چلانے کے لیے فنانس بھی ایک مسئلہ ہے جب کہ تجاوزات ختم کر بھی دیں تو سرکلر ریلوے فوری بحال نہیں ہوسکتا۔ انہوں نے کہا کہ پریشانی کی بات یہ ہے کہ عمران خان نے کہا کہ بڑے لیڈر کی پہچان یو ٹرن لینا ہے، کہیں ایسا نہ ہو کہ اس بات پر بھی یو ٹرن لے لیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں

سینٹرل جیل کراچی کورونا وائرس کے شکار قیدیوں کی تعداد 1100 تک پہنچ گئی

سینٹرل جیل کراچی کورونا وائرس کے شکار قیدیوں کی تعداد 1100 تک پہنچ گئی

کراچی: سندھ بھر کی جیلوں میں یہ تعداد تیرہ سو تجاوز کر چکی ہے، ڈسٹرکٹ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے