امریکہ بھی سعودی عرب کے خلاف بول پڑا

امریکہ بھی سعودی عرب کے خلاف بول پڑا

امریکا نے پہلی بار سعودی عرب سے صحافی جمال خاشقجی کے قاتلوں کو کٹہرے میں لانے کا مطالبہ کیا ہے۔

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے سعودی ولی عہد محمد بن سلمان سے صحافی جمال خاشقجی کے قاتلوں کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب جمال خاشقجی کے قتل میں ملوث ملزمان کا احتساب کرے۔

ترجمان امریکی محکمہ خارجہ ہیتھر نوریٹ کا کہنا ہے کہ وزیر خارجہ نے سعودی ولی عہد محمد بن سلمان سے رابطہ کیا اور دونوں رہنماؤں کے درمیان جمال خاشقجی کے قتل اور یمن تنازع پر بات ہوئی۔

واضح رہے کہ سعودی حکومت نے صحافی کے سعودی قونصل خانے میں قتل کی تصدیق تو کی ہے اور 18 سعودی شہریوں کو حراست میں لینے اور انٹیلی جنس کے 4 افسران کو معطل کرنے جیسے اقدامات بھی کیے ہیں لیکن ترکی کے بارہا مطالبے کے باوجود صحافی کی لاش سے متعلق تاحال کوئی معلومات فراہم نہیں کیں۔ جمال خاشقجی کو 2 اکتوبر کو ترکی کے شہر استنبول میں واقع سعودی قونصلیٹ میں قتل کر دیا گیا تھا ۔

پیرس: جمال خاشقجی قتل کا معاملہ، ٹرمپ اور اردوان کی ملاقات

یہ بھی پڑھیں

مشرقی فرانس میں ایک مسجد پر کار سے حملہ

مشرقی فرانس میں ایک مسجد پر کار سے حملہ

فرانس کے مشرقی علاقے کی ایک مسجد پر گاڑی سے حملہ کیا گیا ہے رشاٹوڈے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے