امریکی مسلم رہنما کی ایران مخالف پابندیوں پر کڑی نکتہ چینی

امریکی مسلم رہنما کی ایران مخالف پابندیوں پر کڑی نکتہ چینی

امریکی مسلمانوں کی تنطیم نیشن آف اسلام کے رہنما نے ایران کے خلاف ٹرمپ انتظامیہ کی سخت ترین پابندیوں پر کڑی نکتہ چینی کی ہے۔

نیشن آف اسلام کے سربراہ لوئیس فراخان نے ایرانی عوام کے خلاف ٹرمپ انتظامیہ کی مخاصمانہ پالیسیوں اور ظالمانہ پابندیوں پر کڑی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران نے جامع ایٹمی معاہدے کے تحت اپنے وعدوں پر عمل کیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ ایران کی جانب سے ایٹمی معاہدے کی مکمل پاسداری کیے جانے کے باوجود امریکہ نے اس معاہدے سے یکطرفہ طور پر علیحدگی اختیار کی اور وہ تہران کے خلاف سخت ترین پابندیاں عائد کر رہا ہے۔
امریکی مسلمانوں کے رہنما نے کہا کہ ٹرمپ انتظامیہ کی عائد کردہ پابندیوں میں ایرانی عوام کو براہ راست نشانہ بنایا گیا ہے حالانکہ عالمی اداروں نے بارہا اس بات کی تصدیق کی ہے کہ ایران نے جامع ایٹمی معاہدے کی ذرہ برابر بھی خلاف ورزی نہیں کی ہے۔
لوئیس فراخان نے مشرق وسطی کے بارے میں امریکی پالیسیوں پر نکتہ چینی کی اور کہا کہ امریکی پالیسیوں کے نتیجے میں مشرق وسطی میں بڑی جنگ کا خطرہ پیدا ہو گیا ہے۔
نیشن اف اسلام کے رہنما نے امریکی صدر کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کی نابودی کی ذمہ داری تمہارے اوپر عائد ہو گی۔

امریکی ریاست کیلیفورنیا کے ایک کلب کے باہر فائرنگ

یہ بھی پڑھیں

امریکی صدر نے سعودی عرب میں اضافی فوجی بھیجنے کی منظوری دے دی

امریکی صدر نے سعودی عرب میں اضافی فوجی بھیجنے کی منظوری دے دی

واشنگٹن: فوجی بھیجنے کا فیصلہ امریکی قومی سلامتی کے اعلیٰ سطح اجلاس میں کیا گیا، …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے