گھروں کے, خواہشمند افراد کو, 20 فیصد بیعانہ, ادا کرنا ہوگا

گھروں کے خواہشمند افراد کو 20 فیصد بیعانہ ادا کرنا ہوگا

اسلام آباد:وزیر اعظم عمران خان کے نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام (این پی ایچ پی) کی وسیع پیمانے پر تشہیر کے بعد حکومت نے اس بات کا اعلان کیا ہے کہ درخواست گزار کو اپنے خوابوں کے گھر کی کل لاگت کا 20 فیصد بطور بیعانہ ادا کرنا پڑے گا

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما سید فردوس شمیم نقوی نے ہاؤسنگ ٹاسک فورس کے چیئرمین ضیغم رضوی اور پنجاب کے وزیر برائے ہاؤسنگ، شہری ترقی اور ہیلتھ انجینئرنگ محمود الرشید کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس میں کہا کہ ’ ہر شخص کو گھر کی قیمت کا 20 فیصد ادا کرنا پڑے گا جبکہ بقایا 80 فیصد حکومت ادا کرے گی
یہ پہلی مرتبہ ہے کہ حکومت کی جانب سے اس بات کا اعلان کیا گیا کہ گھر کی کل لاگت کا 20 فیصد بطور بیعانہ ادا کرنا ہوگا، اس سے قبل اس پروگرام کی رونمائی کے موقع پر کسی حکومتی عہدیدار کی جانب سے اس طرح کا اعلان سامنے نہیں آیا تھا۔
فردوس شمیم نقوی کا کہنا تھا کہ ’اگر سب سے کم درجے کے گھر/اپارٹمنٹ کی قیمت 30 لاکھ ہے تو درخواست گزار کو 6 لاکھ روپے بطور بیعانہ ادا کرنا ہوگا‘۔
اس حوالے سے وزارت ہاؤسنگ کے ایک سینئر عہدیدار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ گھر کی 20 فیصد رقم درخواست گزاروں کی طرف سے شیئر کی جائے گی جبکہ بقایا رقم بینکوں کی جانب سے ادا کی جائے گی۔
فردوش شمیم نقوی کا کہنا تھا کہ نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کے تحت 50 لاکھ گھر تعمیر کیے جائیں گے، جس کا مطلب ہر سال 10 لاکھ گھر تعمیر کرنا ہے۔
انہوں نے کہا کہ سروے کے مطابق ہر سال ملک میں 3 سے ساڑھے 3 لاکھ تک گھر تعمیرکیے جارہے، جنہیں ہم بڑھا کر 10 لاکھ تک لے جائیں گے۔
رہنما پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام مورٹگیج ہاؤسنگ نظام کی بنیاد پر ہے، جس کے تحت گھرکے مالک کو 20 سال کے اندر پوری رقم واپس ادا کرنی ہوگی۔
ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے اس مقصد کو پورا کرنے کے لیے ایک جامع حکمت عملی تیار کی ہے اور حکومت عوام کو کرائے کے خرچ سے نکال کر اپنا خود کا گھر فراہم کرنا چاہتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

پیپلز پارٹی, نے, قومی اسمبلی میں, احتجاج کیا

پیپلز پارٹی نے قومی اسمبلی میں احتجاج کیا

اسلام آباد: پیپلزپارٹی خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ جمہوریت کے لیے پیپلز پارٹی نے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے