صحرا کی, بلند آواز ,اورمٹھاس, ریشماں

صحرا کی بلند آواز اورمٹھاس ریشماں

بلبل صحرا ریشماں کی پیدائش راجھستان انڈیا میں 1947ء کو ہوئی کراچی ہجرت کے بعد صرف بارہ برس کی عمر میں انھوں نے جب سیہون شریف میں دھمال لعل میری پت رکھیو پیش کی

ریشماں نے جہاں پاکستان میں مقبول گیت گائے، وہیں 80ء کی دہائی میں بھارتی فلم کے گیت لمبی جدائی نے انھیں شہرت کے افق پرپہنچا دیا۔ انھوں نے اپنے فنی سفرمیں بہت سے مقبول گیت ’ ہائے اورربا، آنکھیاں نو رہن دے، وے میں چوری چوری، میری ہم جولیاں، کتھے نین نہ جوڑیں، آنکھیاں ملا کے چنا ، گائے، جنہیں دنیا بھرمیں بے حد پسند کیا گیا۔
بھارت کی آنجہانی وزیراعظم اندراگاندھی سمیت دنیا کی اہم شخصیات ان کے فن کی مداح تھیں۔ حکومت پاکستان کی جانب سے انھیں صدارتی ایوارڈ برائے حسن کارکردگی اورپھرستارہ امتیاز سے نوازا گیا۔ ریشماں 3نومبر2013ء کوکینسرجیسے مہلک مرض سے لڑتے ہوئے اپنے خالق حقیقی سے جاملیں۔

یہ بھی پڑھیں

ذہنی امراض اور اس کے بارے میں معاشرے کے رویے کو منفرد انداز سے اجاگر کیا ہے

ذہنی امراض اور اس کے بارے میں معاشرے کے رویے کو منفرد انداز سے اجاگر کیا ہے

صبا قمر نے حال ہی میں اپنا یوٹیوب چینل شروع کیا ہے جس میں انہوں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے