جوہری تجربہ گاہ کے انہدام کے بعد شمالی کوریا نے معائنے کی اجازت دے دی

جوہری تجربہ گاہ کے انہدام کے بعد شمالی کوریا نے معائنے کی اجازت دے دی

پیانگ یانگ: شمالی کوریا نے اپنے جوہری تجربہ گاہ کے انہدام کے بعد بین الاقوامی معائنہ کاروں کو معائنے کی اجازت دے دی۔

تفصصیلات کے مطابق شمالی کوریا کی جانب سے اعلان کیا گیا تھا کہ اس نے اپنے جوہری پروگراموں کے تنصیبات منہدم کردیے ہیں تاہم کسی کو معائنے کی اجازت نہیں دی تھی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق شمالی کوریا اپنے جوہری تجربات کے مقام پُونگی ری کے معائنے پر رضامند ہے، بین الاقومی معائنہ کار جگہ کا دورہ کریں گے۔

رواں ماہ کے آغاز میں امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے کہا تھا کہ شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ ان بین الاقوامی معائنہ کاروں کو شمالی کوریا کی جوہری اور میزائل تنصیبات میں داخلے کی اجازت دینے پر تیار ہیں۔

خیال رہے کہ 8 اکتوبر کو امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے مختصر دورے کے دوران کم جونگ سے ملاقات کی تھی، انہوں نے بتایا تھا کہ معائنہ کاروں کی ٹیم میزائلوں کے انجن ٹیسٹ کرنے کی تنصیب اور جوہری تجربات کے مقام کا دورہ کرے گی، یہ دورہ فریقین کے بیچ لوجسٹک امور پر اتفاق رائے ہونے کے فوری بعد کیا جائے گا۔

شمالی کوریا حکام کے مطابق انہوں نے گزشتہ برس اپنا جوہری اور بیلسٹک میزائل پروگرام ترک کر دیا تھا۔

یاد رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ ان کے مابین رواں سال جون کے مہینے میں سنگاپور میں ملاقات ہوئی تھی، ملاقات کے بعد ٹرمپ نے کہا تھا کہ اب شمالی کوریا سے کسی قسم کا جوہری خطرہ نہیں ہے۔

شام کے شہر ادلب میں دہشت گرد گروہوں میں جھڑپیں

یہ بھی پڑھیں

امریکی صدر نے سعودی عرب میں اضافی فوجی بھیجنے کی منظوری دے دی

امریکی صدر نے سعودی عرب میں اضافی فوجی بھیجنے کی منظوری دے دی

واشنگٹن: فوجی بھیجنے کا فیصلہ امریکی قومی سلامتی کے اعلیٰ سطح اجلاس میں کیا گیا، …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے