اگر بیوروکریٹس کے ذریعے ہی حکومت چلانی ہے, تو انتخابات, کی کیا, ضرورت

اگر بیوروکریٹس کے ذریعے ہی حکومت چلانی ہے تو انتخابات کی کیا ضرورت

اسلام آباد : فواد چوہدری نے کہا کہ ‘وفاقی وزیر اعظم سواتی اس معاملے میں صحیح ہیں یا غلط مسئلہ یہ نہیں ہے، مسئلہ یہ ہے کہ ایک آئی کس طرح یہ کر سکتے ہیں کہ وہ ایک وفاقی وزیر کی فون کال نہ اٹھائیں اور دوبارہ فون کرنے کی زحمت بھی نہ کریں

یہ پہلا موقع نہیں ہے، اس سے قبل وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی نے بھی آئی جی کے خلاف وزیر اعظم و وزیر داخلہ عمران خان کو عدام تعاون کی شکایت بھیجی۔’
انہوں نے کہا کہ ‘اسلام آباد کے اسکولوں اور کالجز میں منشیات فروخت ہورہی ہے، شہریار آفریدی نے بتایا کہ وہ اس حوالے سے آئی جی کو فون کرتے ہیں تو ان کا جواب نہیں آتا اور نہ ہی وہ منشیات اسمگلروں کے خلاف کوئی کارروا کر رہے ہیں۔’
ان کا کہنا تھا کہ ‘شہریار آفریدی نے یہ شکایت بھی کی کہ اسلام آباد کے تھانوں میں رشوت کی شکایات ہیں اس پر بھی آئی جی تعاون نہیں کر رہے۔’
فواد چوہدری نے کہا کہ ‘آئی جی، وزیر اعظم اور وزیراعلیٰ کو جوابدہ ہے، یہ بیانیہ بنانے کی کوشش کرنا کہ آپ فون نہ اٹھائیں تو ہیرو بن جائیں گے اس سے ملک میں بے چینی پیدا ہوگی، اگر بیوروکریٹس کے ذریعے ہی حکومت چلانی ہے تو انتخابات کی کیا ضرورت ہے، اگر ملک کا وزیر اعظم جائز شکایات پر بھی آئی جی تبدیل نہیں کر سکتا تو انتخابات کرانے کا کیا فائدہ، پھر تو چند بیوروکریٹس سے ہی حکومت چلا لیتے ہیں۔
‘خیبر پختونخوا میں 5 سال کے دوران شکایات پر پولیس والوں کے کئی بار تبادلے کیے گئے، وزیر اعظم اور وزیراعلیٰ کے اختیارات ہیں جنہیں وہ استعمال کریں گے، ممکن نہیں کہ آئی جی، ڈی سی یا کوئی اور وزیراعظم اور دیگر کو جواب دہ نہ ہوں۔’
وزیر اعظم عمران خان کی بنی گالہ کی رہائش گاہ سے متعلق وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ ‘وزیراعظم کا گھر سی ڈی اے کی حدود میں نہیں آتا تھا، ان کا کا گھر موہڑہ نور یونین کونسل کی حدود میں آتا تھا، 30 سال قبل یہ گھر پچھلے قوانین کے تحت بنا تھا۔’
پاکستان سٹیزنز پورٹل پر مختلف محکموں سے متعلق اب تک ایک لاکھ شکایات موصول ہوئی ہیں جن میں سے نصف پنجاب سے، تقریباً 20 ہزار سندھ سے جبکہ بقیہ خیبر پختونخوا اور بلوچستان سے متعلق ہے، آئندہ اتوار کو ہم ان شکایات کے ازالے سے متعلق آگاہ کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں

صدر مملکت نے چاروں گورنر اورعلماء کی ویڈیو کانفر نس آج

صدر مملکت نے چاروں گورنر اورعلماء کی ویڈیو کانفر نس آج

اسلام آباد: حکومت نے مساجد کیلئے ایس اوپیز کا از سرنو جائزہ لینے کا فیصلہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے