بچوں کےاغواء کےبعدایک اور کام شروع ہوگیا

پشاور:بچوں کے اغواء کے واقعات تھمے نہیں، خیبرپختونخوا سے خواتین کی اسمگلنگ کی خبریں بھی سامنے آنے لگیں۔ چترال کی خاتون نے الزام لگایا ہے کہ اسے پنجاب لے جاکر 6 لاکھ روپے میں فروخت کیا گیا۔

نومولود بچوں کے بعد اب دوشیزاؤں کے اغواء اور فروخت کا تہلکہ خیز انکشاف سامنے آگیا۔ چترال کی جوانسال لڑکی کو شادی کا جھانسہ دیا اور بے ہوش کرکے محض 6 لاکھ میں فروخت کیا گیا۔ جس کے گینگ میں چترال، پشاور اور پنجاب کے لوگ بھی شامل ہیں۔

اسمگلرز کے چنگل سے فرار ہونیوالی خاتون کو 6 ماہ تک تاریک کمرے میں قید رکھا گیا۔ جسے بات نہ ماننے پر جنسی تشدد کا نشانہ بھی بنایا جاتا۔چترالی دوشیزہ نے وزیراعظم نواز شریف، وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹ اور عدلیہ سے انصاف کی اپیل کردی

یہ بھی پڑھیں

خیبر پختونخوااسمبلی میں اب پی ٹی آئی کی اتحادی جماعتوں کی تعداد 2 ہوگئی

خیبر پختونخوااسمبلی میں اب پی ٹی آئی کی اتحادی جماعتوں کی تعداد 2 ہوگئی

پشاور:خیبرپختونخوا اسمبلی میں پارلیمانی پارٹیوں کی تعداد بڑھ کر 7 ہوگئی ہے جب کہ جماعت …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے