ماضی میں فلسطینیوں سے, معاملات نمٹانے, کے, لیے, الگ دفتر قائم کیا, گیا تھا

ماضی میں فلسطینیوں سے معاملات نمٹانے کے لیے الگ دفتر قائم کیا گیا تھا

امریکا :سیکریٹری آف اسٹیٹ مائیک پومپیو نے بیت المقدس (یروشلم) میں قائم فلسطین کے امور سے متعلق دفتر کو اپنے متنازع سفارت خانے میں ضم کرنے کا اعلان کر دیا

مائیک پومپیو کا کہنا تھا کہ امریکی قونصل جنرل کو ماضی میں فلسطینیوں سے معاملات نمٹانے کے لیے الگ دفتر قائم کیا گیا تھا جس کو اب سفارت خانے کے اندر فلسطینی امور یونٹ میں تبدیل کردیا جائےگا۔
فلسطین لبریشن آگنائزیشن (پی ایل او) نے اس اقدام کی فوری طور پر مذمت کی ہے جبکہ امریکا واحد بڑی طاقت ہوگی جو فلسطینیوں کے حوالے سے بغیر کسی خاص نمائندہ دفتر کے رہ جائے گا۔
پومپیو نے فلسطین اور امریکا کے درمیان تعلقات میں کسی تبدیلی کے تاثر کو مسترد کیا لیکن یہ فیصلہ امریکا میں فلسطینی مشن کو بند کروانے کے بعد کیا گیا جس کے باعث غصہ پایا جاتا ہے۔
امریکی سیکریٹری خارجہ نے ایک بیان میں کہا کہ ‘یہ فیصلہ ہمارے کام کو دنیا بھر میں موثر اور بہتر بنانے کی ہماری عالمی کوششوں کی جانب اقدام کے طور پر کیا گیا ہے، یہ یروشلم، مغربی کنارے اور غزہ کی پٹی کے ساتھ امریکی پالیسی میں تبدیلی کا کوئی اشارہ نہیں ہے’۔
ان کا کہنا تھا کہ امریکا نے اسرائیلی اور فلسطینیوں کے درمیان امن معاہدے کو کیسے عملی شکل دی جائے اس حوالے سے ‘کوئی پوزیشن نہ لینے کے فیصلے کو جاری رکھا ہوا ہے’۔
انہوں نے کہا کہ ‘انتظامیہ پائیدار اور عملی امن حاصل کرنے کے لیے پرعزم ہے جو اسرائیل اور فلسطین کے شاندار مستقبل کے لیے ضروری ہے’۔

یہ بھی پڑھیں

سعودی وزیرِ خارجہ نے کشمیر کے سوال پر بھارتی صحافی کا منہ بند کرا دیا

سعودی وزیرِ خارجہ نے کشمیر کے سوال پر بھارتی صحافی کا منہ بند کرا دیا

نئی دہلی: سفارتی محاذ پر بھارت کو ایک اور دھچکا پہنچا ہے، سعودی وزیرِ خارجہ نے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے