پاکستان, اسٹیل ملز (پی ایس ایم) کے اسٹیک ہولڈرز, نے, وزیراعظم عمران خان سے مطالبہ

پاکستان اسٹیل ملز (پی ایس ایم) کے اسٹیک ہولڈرز نے وزیراعظم عمران خان سے مطالبہ

اسلام آباد:اسٹیل ملز کے اسٹیک ہولڈرز ، ملازمین، پینشنرز، ٹھیکے داروں کی جانب سے وزیراعظم کو ارسال کردہ خط میں جون 2015 میں مل کی بندش کے پسِ پردہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت کو مجرمانہ غفلت کا مرتکب قرار دیا

اسٹیل مل کا مجموعی خسارہ اور اخراجات 4 سو 65 ارب روپے سے تجاوز کرچکا ہے اس کے علاوہ برآمدات نہ ہونے کے سبب 2.5 ارب ڈالر کا نقصان بھی ہورہا ہے۔
خط کے مطابق مل کی بندش سے ہونے والے نقصان کے سبب نہ صرف ملازمین اور ریٹائرڈ افراد مسائل کا شکار ہیں بلکہ لوہا فراہم کرنے والے، ٹھیکے داروں اور مل چلانے کے معاملات میں حصہ لینے والے بھی بری طرح متاثر ہوئے ہیں۔
خط میں مزید کہا گیا ہے کہ اسٹیل مل کی موجودہ صورتحال کے پیچھے بدعنوانی، نااہلیت، ضرورت سے زائد ملازمین کی بھرتی اور حکومت کا اس کی بحالی کے معاملے سے صرف نظر کرنا شامل ہے۔
اس ضمن میں اگست 2013 میں کابینہ کی اقتصادی رابطہ کونسل کے سامنے 28 ارب روپے کے پیکج کی سمری بھی پیش کی گئی جس سے اسٹیل مل کو بحال کیا جاسکے لیکن اس وقت کے وزیر خزانہ اسحٰق ڈار نے اسے مسترد کردیا۔

یہ بھی پڑھیں

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کورونا وائرس کو شکست دے دی

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کورونا وائرس کو شکست دے دی

کراچی: وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کا تیسراکورونا ٹیسٹ منفی آگیا ، وہ 17روز تک …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے