ملک کی اعلیٰ کاروباری, شخصیات, ماہرینِ اقتصادیات اور, صنعت کاروں, سے, ملاقات

ملک کی اعلیٰ کاروباری شخصیات ماہرینِ اقتصادیات اور صنعت کاروں سے ملاقات

اسلام آباد: وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ وہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی ) کے اصلاحاتی ایجنڈے کو نافذ کرتے ہوئے ملک کو پائیدار ترقی کی پٹری پر استوار کرنا چاہتے ہیں

وزیراعظم ہاؤس کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا کہ ملاقات کا مقصد ملکی ترقی اور معیشت کی حالیہ صورتحال پر تبادلہ خیال کرنا تھا۔
اس موقع پر اجلاس میں وزیرخزانہ اسد عمر وزیراعظم کے مشیر برائے کامرس عبدالرزاق داؤد، حسین داؤد، علی حبیب، مشیر محمد، عارف حبیب، میاں عبداللہ، طارق سیگل، خرم مختار، فواد احمد مختار، ڈاکٹر سلمان شاہ، ڈاکٹر اشفاق حسن خان اور دیگر نے شرکت کی۔
مذکورہ اجلاس تقریباً 3 گھنٹے جاری رہا اور اس میں تجویز پیش کی گئی کہ ملک میں درآمدات کو محدود کرنے کی کوشش کرنی ہوگی تا کہ قیمتی زرِ مبادلہ ملک سے باہر جانے سے بچایا جاسکے۔
اجلاس کے شرکا کو موجودہ حکومت کو وراثت میں ملکنے والے شدید مالی بحران سے آگاہ کیا گیا جس پر انہوں نے معیشت کو مستحکم کرنے اور تاجر برادری کا اعتماد بحال کرنے کے حکومتی اقدامات کو سراہا۔
ملاقات میں ہونے والی گفتگو میں شرکا نے مقامی صنعتوں کو فروغ دینے کی متعدد تجاویز پیش کیں جس سے پاکستانی مصنوعات بین الاقوامی میعار کی مصنوعات کا مقابلہ کرسکیں۔
اس موقع پر تاجر برادری نے وزیراعظم کو یقین دلایا کہ ان کی جانب سے موجودہ بحران سے نمٹنے کے لیے اصلاحاتی ایجنڈے کے نفاذ کی بھرپور حمایت کی جائے گی۔
اس موقع پر وزیرا عظم نے اجلاس کے شرکا کی جانب سے بہترین تجاویز دینے پر ان کا شکریہ ادا کیا، ان کا کہنا تھا کہ اقتصادی صورتحال اس بات کی متقاضی ہے کہ مشکل معاشی فیصلے کیے جائیں تاہم حکومت اپنی طرف سے غریب افراد کو ان کے اثرات سے محفوظ رکھنے کی بھرپور کوشش کررہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

سندھ طاس معاہدہ ختم, کرنے کی, دھمکی دی ,جو سنگین, غلطی ہوگی

سندھ طاس معاہدہ ختم کرنے کی دھمکی دی جو سنگین غلطی ہوگی

اسلام آباد: وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ کوپلوامہ حملے کے بعد …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے