پالیسی, تیار کرنا, بیورو کریٹس کا, کام نہیں ہے

پالیسی تیار کرنا بیورو کریٹس کا کام نہیں ہے

اسلام آباد: وزیرِ اطلاعات کا کہنا تھا کہ پالیسی تیار کرنا بیورو کریٹس کا کام نہیں ہے، لیکن جو بیوروکریٹ حکومتی پروگرام کے نفاذ کے لیے کام نہیں کرے گا وہ گھر جائے گا

وزیرِ اعظم عمران خان نے اپنا واضح پیغام دے دیا ہے، ہمیں اپنے ان وعدوں کو پورا کرنا ہے جو عوام سے کیے تھے۔
انسپکٹر جنرل (آئی جی) پنجاب محمد طاہر کو ان کے عہدے سے ہٹانے کے حکومتی فیصلے کی وضاحت دیتے ہوئے وفاقی وزیرِ نے کہا کہ جن لوگوں کو ہماری پالیسی سے اختلاف ہے تو وہ خود کو ’حکومت سے الگ‘ کر سکتا ہے۔
انہونے آئی جی پنجاب کو ہٹانے کے لیے حکومتی نوٹیفکیشن کو روکنے پر الیکشن کمیشن پاکستان کو تنقید کا نشانہ بنایا اور اسے غیر قانونی بھی قرار دیا۔
فواد چوہدری نے کہا کہ پی ٹی آئی کو عوام نے مینڈیٹ دیا ہے، اور اس ملک میں پارلیمانی نظام ہے اس لیے بیورو کریٹس منتخب نمائندوں کی عزت کرنے کے پابند ہیں۔
ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ گزشتہ کئی سالوں سے متعدد بیوروکریٹس نے اپنے ذاتی تعلقات بھی استوار کیے ہیں، تاہم ایسے بیوروکریٹس جو یہ سمجھتے ہیں کہ پی ٹی آئی کی پالیسی غلط ہے تو اسے چاہیے کہ وہ گھر چلا جائے۔
وزیرِ اطلاعات کا کہنا تھا کہ وزیرِ اعظم عمران خان نے آئی جی پنجاب کو ماڈل ٹاؤن سانحہ کیس میں پیش رفت میں ناکامی پر ان کے عہدے سے ہٹایا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

کورونا وائرس کے نئے کیسز سامنے آنے کی شرح میں بدستور اضافہ

کورونا وائرس کے نئے کیسز سامنے آنے کی شرح میں بدستور اضافہ

اسلام آباد: ڈی ایچ او آفس اسلام آباد کی رپورٹ کے گذشتہ روز اسلام آباد …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے