ایران نے پڑوسی عرب ملک پر حملہ کردیا،

تہران(ویب ڈیسک) ایرانی فوج پاسداران انقلاب نے کہا ہے کہ اس نے شام میں ان باغیوں کے ہیڈکوارٹرز پر میزائل داغے ہیں جو گذشتہ ماہ ایرانی شہر اہواز میں پریڈ حملے میں ملوث تھے،ترجمان کا کہنا ہے کہ ایرانی فضائیہ نے شام کے دریائے فرات کے مشرق میں واقع دہشت گردوں کے ٹھکانوں پر زمین سے زمین پر مار کرنے والے میزائل داغے جس سے دہشت گردوں کے ٹھکانے تباہ ہوگئے۔

برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق ایران کی فوج پاسدارانِ انقلاب نے کہا ہے کہ شام میں اُن دہشت گردوں کے ہیڈکوارٹر پر میزائل داغے ہیں جو گزشتہ ماہ ایرانی شہر اہواز میں فوجی پریڈ پر حملے میں ملوث تھے۔ایرانی پاسداران انقلاب کے خبررساں ادارے سپاہ نیوز کی جانب سے پیر کو بتایا گیا ہے کہ مغربی ایران سے 6 میزائل مشرقی شامی علاقے البوکمال پر داغے گئے،اس کارروائی میں میزائلوں کے علاوہ بمبار ڈرونز کا بھی استعمال کیا گیا۔ درمیانے درجے تک مار کرنے والے ذوالفقار اور قائم نامی میزائل فائر کیے گئے جن کی حد 750 سے 8 سو کلومیٹر تھی۔

پاسدارانِ انقلاب نے اپنی ویب سائٹ ‘سپاہ نیوز’ میں حملے سے متعلق تصاویر بھی شائع کی ہیں تاہم حملہ کس مقام سے کیا گیا اور کتنے میزائل داغے گئے اس حوالے سے کوئی تفصیلات فراہم نہیں کی گئی ہیں۔ حملے سے ہونے والے نقصانات سے متعلق بھی کوئی معلومات نہیں دی گئی ہے۔ دوسری طرف شامی باغیوں کی جانب سے ان خبروں کی تردید کی گئی ہے، جن میں کہا جا رہا تھا کہ باغی شام کے شمال میں اپنے زیر قبضہ علاقے سے بھاری عسکری آلات نکال رہے ہیں۔
واضح رہے کہ 22 ستمبر کو ایران میں فوجی پریڈ کے دوران فوجی لباس میں ملبوس مسلح دہشت گردوں نے فائرنگ کر کے عام شہریوں سمیت 24 فوجی ہلاک اور 50 سے زائد افراد کو زخمی کر دیا تھا۔ شدت پسند تنظیم اہواز نیشنل رزسٹنس نے حملے کی ذمہ داری قبول کی تھی۔

یہ بھی پڑھیں

الٹرا سپر سونک میزائل "ایون گارڈ" کیا ہے

الٹرا سپر سونک میزائل "ایون گارڈ” کیا ہے

روس: صدرپیوٹن کا کہنا تھا کہ امریکہ کی جانب سے اینٹی بیلسٹک میزائل ٹریٹی کے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے