قندیل بلوچ قتل کیس ،والد نے قاتل کو معاف کر دیا

ماڈل قندیل بلوچ کے قاتل کو والد نے معاف کر دیا ہےجبکہ مجرم کی ضمانت کے لیے عدالت میں بیان حلفی جمع کر وایا گیا تاہم عدالت نے ضمانت لینے سے انکار کر دیا ہے۔
ملتان میں غیرت کے نام پر قتل کی جانے والی ماڈل واداکارہ قندیل بلوچ کے قتل کیس نے ایک نیا موڑ لے لیاہے، مقتولہ کے والد عظیم نے بلاخر وہ کردیا جس کا اندیشہ تھا۔عظیم ماہڑہ نے قتل کیس کے مرکزی ملزم وسیم کو معاف کرنے کےلئے عدالت میں درخواست اور بیان حلفی جمع کروادیا ہے،ملزم وسیم مقتولہ کا بھائی ہے جس نے مبینہ طورپر اپنی بہن کو 16 جولائی 2016 میں قتل کردیا تھا جس کی ایف آئی آر پولیس تھانہ مظفرآباد میں درج کی گئی، آج ملزم کی جانب سے درخواست ضمانت بعد ازگرفتاری دی گئی تھی جسے ایڈیشنل سیشن جج سرداراقبال ڈوگرنے مسترد کردی،واضح رہے کہ اس قبل مقتولہ کے والد عظیم ماہڑہ نے متعدد بارکہا تھا کہ وہ کسی صورت میں ملزم کو معاف نہیں کریں گے

یہ بھی پڑھیں

جن لوگوں نے مادر ملت کو غدار کہا تھا ان کو بھی پیغام دوں کہ مادر ملت زندہ باد

جن لوگوں نے مادر ملت کو غدار کہا تھا ان کو بھی پیغام دوں کہ مادر ملت زندہ باد

لاہور: جس کو آپ نے شہ رگ کشمیر کہا تھا وہ کٹ گئی ہے، غلط …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے