مانسہرہ دھماکے کے ملزم کی سزائے موت پر عمدرآمد روک دیا گیا

سپریم کورٹ میں مانسہرہ دھماکے میں سزائے موت پانے والے ملزم کی سزا کے خلاف کیس کی سماعت ہوئی، کیس کی سماعت جسٹس عظمت سعید کی سر براہی میں 3 رکنی بینچ نے کی، ملزم کے وکیل نے عدالت عظمیٰ سے سوال کیا کہ میرے مؤکل پر بنائے گئے تمام کیسز کو یکجا کیاجائے گا؟ جس پر جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس دیئے کہ ہر کیس کا ریکارڈ منگوائیں گے۔ جسٹس عظمت نے ریمارکس دیئے کہ ہر کیس کو الگ الگ سنیں گے، کیسز کو یکجا کیا تو آپ کے موکلان مارے جائیں گے۔
عدالت نے ملزم قاسم شاہ کی سزائے موت پر عمل درآمد روک دیا۔ جب کہ فریقین کو نوٹسز جاری کرتے ہوئے کیس کی سماعت غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کردی گئی۔

یہ بھی پڑھیں

نیب نے جعلی بینک اکاؤنٹس اسکینڈل میں 22 کروڑ 40 لاکھ روپے برآمد کرکے حکومت سندھ کے حوالے

نیب نے جعلی بینک اکاؤنٹس اسکینڈل میں 22 کروڑ 40 لاکھ روپے برآمد کرکے حکومت سندھ کے حوالے

اسلام آباد: جاوید اقبال نے سندھ کے چیف سکریٹری ممتاز علی شاہ کو 22 کروڑ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے