محمود اچکزئی کو چوہدری نثار کے بیان کا جواب دینے کی اجازت نہ ملی

قومی اسمبلی کے اجلاس میں پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محموداچکزئی نے چوہدری نثار کے بیان دینے کی اجازت طلب کی لیکن انہیں ایوان میں بولنے کی اجازت نہ ملی۔اسمبلی اجلاس کے دوران سپیکر قومی اسمبلی سردارایاز صادق نے ایک چٹھی پر ”نو پلیز“لکھ کر اچکزئی کے پاس بھجوا دیا۔ایاز صادق نے سربراہ پختونخوا ملی عوامی پارٹی کو ’صاف جواب‘دیتے ہوئے اجلاس کو غیر معینہ مدت تک کیلئے ملتوی کردیا۔

خیال رہے کہ محمود اچکزئی نے سول ہسپتال کوئٹہ میں ہونے والے بم دھماکے کے بعدانٹیلی جنس ایجنسیوں پر تنقید کی تھی اور انٹیلی جنس افسران کوبرطرف کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

جنرل قمر جاوید باجوہ مزید 3 سال کیلئے آرمی چیف مقرر

جنرل قمر جاوید باجوہ مزید 3 سال کیلئے آرمی چیف مقرر

وزیراعظم عمران خان نے جنرل قمر جاوید باجوہ کو مزید 3 سال کے لیے آرمی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے