لودھراں میں قاری کے تشدد سے سات سالہ بچے کا بازو ٹوٹ گیا

لودھراں میں مدرسے کے قاری نے سات سالہ بچے علی حسن کو بچوں کیساتھ کھیلنے پر مبینہ طور پر تشدد کا نشانہ بنایا جس سے اس کا بازو ٹوٹ گیا ۔ بچے کو زخمی حالت میں ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال لودھراں منتقل کر دیا گیا ہے ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پولیس نے بچے کے والدین کی درخواست پر تفتیش شروع کر دی ہے جس کے بعد حقائق سامنے آئیں گے اور مقدمہ درج کیا جائے گا ۔
ذرائع نے مزید بتایا کہ بازو ٹوٹنے کے بعد بچے کو ہسپتال لیجایا گیا جہاں رات کے وقت ڈاکٹر موجود نہیں تھے اور آج صبح بچے کا بازو جوڑا گیا ہے ۔

یہ بھی پڑھیں

بہت جلد, اسلام آباد, کی طرف, لانگ مارچ کریں, گے

بہت جلد اسلام آباد کی طرف لانگ مارچ کریں گے

چکوال: مولانا فضل الرحمٰن نے کہا ہے کہ قوم کو نااہل ٹولے سے نجات دلانے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے