الیکش کمیشن نے بھی مولانا فضل الرحمان کی کچی کردی

الیکشن کمیشن نے جے یو آئی ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا الیکشن کمیشن سے استعفیٰ کا مطالبہ مسترد کر دیا۔

الیکشن کمیشن کے ذرائع کا کہنا ہے کہ انتخابات 2018 صاف شفاف اور غیر جانبدارانہ ہوئے جس میں عوام نےآزادانہ ماحول میں حق رائے دہی استعمال کیا۔بغیرثبوت کےانتخابات کی شفافیت کے خلاف بیانات افسوسناک اورحقائق کے برعکس ہیں۔

الیکشن کمیشن کے مطابق ذاتی مفادات کی بنیاد پرپاکستانی عوام کے مینڈیٹ کا احترام نہ کرنا جمہوریت کے منافی ہے،الیکشن کمیشن نے انتخابی تنازعات کے حل کیلئے ٹریبونل مقرر کردیے ہیں،جس کو شکایت ہے وہ الزامات کے بجائے ٹریبونل میں پٹیشن دائر کرے۔
الیکشن کمیشن نے خبردار کیا ہے کہ قومی اداروں پر الزامات لگا کر دباؤ میں نہ لایا جائے، الیکشن کمیشن کسی قسم کے دباؤ کو قبول نہیں کرے گا۔

واضح رہے گزشتہ روز جے یوآئی کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے پشاور پریس کلب میں میڈیا سےگفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ سیاسی جماعتوں نےانتخابی نتائج کومسترد کیا، اب بھی وقت ہے کہ الیکشن کمیشن اپنی غلطیوں کا اعتراف کرے، نیا الیکشن ہونا چاہیے، اکثریت کی حکومت جعلی ہے

یہ بھی پڑھیں

نیب نے جعلی بینک اکاؤنٹس اسکینڈل میں 22 کروڑ 40 لاکھ روپے برآمد کرکے حکومت سندھ کے حوالے

نیب نے جعلی بینک اکاؤنٹس اسکینڈل میں 22 کروڑ 40 لاکھ روپے برآمد کرکے حکومت سندھ کے حوالے

اسلام آباد: جاوید اقبال نے سندھ کے چیف سکریٹری ممتاز علی شاہ کو 22 کروڑ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے