مقبوضہ کشمیر میں حق خود ارادیت کیلئے ریفرنڈم مارچ، مزید 2 کشمیری شہید

سری نگر: مقبوضہ کشمیر کی عوام اپنے حق خود ارادیت کے لئے آج وادی میں ریفرنڈم مارچ کر رہے ہیں جب کہ بھارتی فورسز نے فائرنگ کر کے مزید 2 کشمیریوں کو شہید اور متعدد کو زخمی کردیا۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں مسلسل 35 ویں روز بھی کرفیو نافذ ہونے کے باوجود عوام کی جانب سے ریاست بھر میں حق خود ارادیت کے لئے ریفرنڈم مارچ کر رہے ہیں۔ دوسری جانب بھارتی فورسز نے آج بھی کلگام کے علاقے میں بھارت مخالف مظاہرین پر فائرنگ کر کے مزید ایک کشمیری کو شہید کردیا جب کہ قابض فوج کی فائرنگ سے 2 اگست کو زخمی ہونے والا سہیل وانی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا۔بھارتی فوج نے ریفرنڈم مارچ کے لئے ریلی کی قیادت کرنے پر حریت رہنما میر واعظ عمر فاروق کو حراست میں لے لیا۔ اس کے علاوہ بھارت نے روایتی ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے اقوام متحدہ کے ادارے این ایچ سی آر کو مقبوضہ وادی میں داخلے کی اجازت دینے سے انکار کردیا۔ دوسری جانب حریت رہنماؤں نے بھارتی مظالم کے خلاف ہڑتال میں 18 اگست تک توسیع کرتے ہوئے 15 اگست کو مقبوضہ وادی سمیت دنیا بھر میں یوم سیاہ منانے کا اعلان کیا ہے۔واضح رہے کہ مقبوضہ کشمیر میں تحریک آزادی کے نوجوان رہنما برہان مظفر وانی کی شہادت کے بعد شروع ہونے والے مظاہروں میں بھارتی فوج کی بربریت کے نتیجے میں اب تک 74 سے زائد کشمیری شہید اور ہزاروں زخمی ہوچکے ہیں جب کہ قابض فوج کی جانب سے مظاہرین پر پیلٹ گن کا استعمال کیا جارہا ہے  جس سے سیکڑوں کشمیری اپنی بینائیوں سے محروم ہوگئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

جرمنی کی, حکومت ایران کے, ساتھ بحران میں ثالثی, کا کردار, ادا کرنا, چاہتی ہے

جرمنی کی حکومت ایران کے ساتھ بحران میں ثالثی کا کردار ادا کرنا چاہتی ہے

برلن: جرمنی کی حکومت ایران کے ساتھ بحران میں ثالثی کا کردار ادا کرنا چاہتی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے