ایم کیو ایم کا اجتماعی گرفتاریاں دینے پر غور

رابطہ کمیٹی کے رکن شاہد پاشا نے کہا ہے کہ ایم کیو ایم سینٹرل ایگزیکیٹو کونسل کے ممبر شکیل احمد سمیت ذمے داران اور کارکنان کی گھروں اور دفاتر سے گرفتاریوں اور ایم کیو ایم کو سیاسی سرگرمیوں سے روکنے کی رابطہ کمیٹی نے مذمت کرتے ہوئے کہا کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے کراچی آپریشن کے نام پر متحدہ کے خلاف آپریشن کر رہے ہیں جسے کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا۔

رابطہ کمیٹی کا کہنا تھا کہ جرائم پیشہ عناصر کو آزادی دے کر متحدہ کارکنان کو پاک سرزمین پارٹی میں شامل ہونے کا دباؤ ڈالا جا رہا ہے۔

ایم کیو ایم رہنماؤں کا کہنا تھا کہ زیادتیوں کا سلسلہ نہ رکا تو ایم کیو ایم بھرپور احتجاج کے ساتھ اجتماعی گرفتاریاں بھی پیش کرنے پر غور کر رہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں

وفاقی حکومت کا اقدام صوبائی خود مختاری پر حملے کے مترادف ہے

وفاقی حکومت کا اقدام صوبائی خود مختاری پر حملے کے مترادف ہے

کراچی: بلاول بھٹو نے کہا کہ وفاقی حکومت عوامی ردعمل سے پہلے اسپتالوں پر اپنا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے