سارہ اولمپکس تمغہ حاصل کرنے والی پہلی عرب خاتون بن گئیں

مصری ویٹ لفٹر سارہ احمد خواتین کے 69 کلوگرام کے مقابلے میں کانسی کا تمغہ جیت کر عرب دنیا کی پہلی ایتھلیٹ بن گئی ہیں جنھوں نے اولمپکس میں کسی بھی مقابلے میں کوئی تمغہ حاصل کیا ہے۔

برازیل کے شہر ریو میں جاری اولمپکس مقابلوں کے دوران حجاب میں ملبوس 18 سالہ سارہ احمد نے 255 کلوگرام وزن اٹھا کر چینی شیانگ یانمے اور قزاقستان کی ظہیرہ زاپارکول کے بعد تیسری پوزیشن حاصل کی۔

مصر نے ویٹ لفٹنگ کے مقابلوں میں آخری بار 1948 میں اولمپکس تمغہ جیتا تھا

ادھر امریکی خواتین کی تیراکی کی ٹیم نے چار ضرب دو سو میٹر فری سٹائل مقابلے میں سونے کا تمغہ حاصل کر کے امریکہ کو پانچویں روز بھی پوائنٹس ٹیبل پر سرِفہرست رکھنے میں مدد دی۔

امریکی ٹیم کی قیادت کیٹی لیڈیکی نے کی اور یہ ان کا ریو میں تیسرا طلائی تمغہ ہے۔

آسٹریلیا نے چاندی، جب کہ کینیڈا نے اس مقابلے میں کانسی کا تمغہ حاصل کیا۔

سپین کی مشہور تیراک مِریا بیلمونتے گارسیا نے بالآخر سونے کا تمغہ حاصل کر لیا۔ دو چاندی اور ایک کانسی کا تمغہ جیتنے کے بعد انھوں نے دو سو میٹر بٹرفلائی مقابلے میں سونے کا تمغہ حاصل کیا۔

گارسیا 2012 میں لندن میں ہونے والے اولمپکس میں بھی اسی مقابلے میں چاندی کا تمغہ حاصل کیا تھا جب کہ امریکی کیٹی لیڈیکی اول آئی تھیں۔

امریکہ نے اب تک ان مقابلوں میں کل 31 تمغے جیتے ہیں، جن میں سونے کے دس، چاندی کے 11 اور کانسی کے دس تمغے شامل ہیں۔

پانچواں روز برطانیہ کے لیے خاصا اچھا رہا اور اس کے کھلاڑیوں نے دو طلائی تمغوں سمیت چھ تمغے حاصل کر کے اپنے ملک کو پوائنٹس ٹیبل پر نویں پوزیشن پر پہنچا دیا۔

جو کلارک نے کشتی رانی میں، جب کہ کرس میئرز اور جیک لا نے سِنکرونائئزڈ ڈائیونگ میں سونے کا تمغہ حاصل کیا۔

جاپان کے کوہیے اچیمورا نے مردوں کی جمناسٹکس میں ایک اور تمغہ حاصل کر کے اپنے اولمپک طلائی تمغوں کی تعداد تین تک پہنچا دی۔

27 سالہ جمناسٹ نے ایک سخت مقابلے کے بعد افقی بار پر شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے یوکرین کے اولیگ ورنیائف کو شکست دی۔

تمغوں کی دوڑ میں چین بدستور دوسرے نمبر پر ہے۔ پانچویں روز ڈنگ ننگ نے خواتین کے ٹیبل ٹینس مقابلوں میں سونے کا تمغہ حاصل کر کے اپنے ملک کے طلائی تمغوں کی تعداد دس تک پہنچا دی۔ چین کے کل تمغوں کی تعداد 23 ہے۔

برازیل کی فٹبال ٹیم نے ڈنمارک کو چار صفر سے ہرا کر کوارٹر فائنل کے لیے کوالیفائی کر لیا۔ اس سے قبل برازیل کے دونوں پول میچ بےنتیجہ ثابت ہوئے تھے۔

ادھر ریو 2016 کے منتظمین نے ماریا لینک اکویٹکس سینٹر کے سوئمنگ پول کا رنگ تبدیل ہو کر سبز ہو جانے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اسے جلد درست کر لیا جائے گا۔

انٹرنیشنل سوئمنگ فیڈریشن نے کہا کہ اس کی وجہ یہ تھی کہ پانی کی ٹینکیوں سے بعض کیمیکل ختم ہو گئے تھے، البتہ اس سے تیراکوں کی صحت کو کوئی خطرہ نہیں ہے۔

دوسری جانب گھڑسواری کے مرکز میں ایک اور کارتوس ملنے کے بعد سے سکیورٹی میں اضافہ کر دیا گیا ہے۔ عام خیال ہے یہ کارتوس قریب ہی واقع فوجی احاطے کی طرف سے آیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

زینب عباس آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ میں رپورٹنگ کرتے نظر آئیں گی

زینب عباس آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ میں رپورٹنگ کرتے نظر آئیں گی

لندن: انگلینڈ میں ورلڈکپ کی تیاریاں زور و شور سے جاری ہیں۔عالمی کرکٹ کپ کا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے