بن غازی میں ہلاک ہونے والوں کے والدین کا ہلیری کے خلاف مقدمہ

شان سمتھ اور ٹائرون ووڈز کے والدین پیٹریکا سمتھ اور چارلز ووڈز نے ہلیری کلنٹن کے خلاف ہتک عزت اور نامناسب موت کا مقدمہ دائر کیا ہے۔

درخواست میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ ان کے بیٹوں کی موت کی ایک وجہ سابق وزیر خاجہ کی جانب سے نجی ای میل کا استعمال تھی۔

خیال رہے کہ 11 ستمبر 2012 کو ہونے والے حملے میں امریکی سفیر کرسٹوفر سٹیونز اور دیگر تین امریکی اہلکار ہلاک ہوئے تھے۔

ہلاک ہونے والے دو امریکیوں کے والدین کی جانب سے یہ درخواست کنزرویٹیو گروپ فریڈم واچ نے جمع کروائی ہے۔

ان والدین کا ہلیری کلنٹن کے بارے میں کہنا ہے کہ ’انھوں نے اپنے نجی سرور میں موجود اہم اور خفیہ معلومات کے حوالے سے انتہائی لاپروائی کا مظاہرہ کیا، جس کی وجہ سے لیبیا میں امریکی اہلکاروں کا مقام ظاہر ہوا۔

یہ بھی پڑھیں

جرمنی کی, حکومت ایران کے, ساتھ بحران میں ثالثی, کا کردار, ادا کرنا, چاہتی ہے

جرمنی کی حکومت ایران کے ساتھ بحران میں ثالثی کا کردار ادا کرنا چاہتی ہے

برلن: جرمنی کی حکومت ایران کے ساتھ بحران میں ثالثی کا کردار ادا کرنا چاہتی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے