سارے دو ست چلے گئے

سپریم کورٹ بار کے سابق صدر علی احمد کرد نے کہا ہے کہ سارے دوست چلے گئے ، اب کیا کہوں۔ ان سے جبرابطہ کیا تو وہ ہسپتال میں موجود تھے۔صدمے سے دوچار سینئر وکیل کا کہنا تھا کہ سارے دوست چلے گئے ، جونیئر چلے گئے ، وکلا کی بہت بڑی تعداد ختم ہوگئی اب کیا کہوں۔ پہلے خدشات تھے لیکن اب تو عملی طور پر ہوگیا

یہ بھی پڑھیں

سپریم کورٹ کوئٹہ رجسٹری میں بھی ای کورٹ کا آغاز

سپریم کورٹ کوئٹہ رجسٹری میں بھی ای کورٹ کا آغاز

کوئٹۃ: کراچی کے بعد سپریم کورٹ کوئٹہ رجسٹری میں بھی ای کورٹ کا آغاز ہوگیا،اسلام …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے