عوام پہ پٹرول بم گرانے کی تیاری مکمل، سات روپے فی لٹر اضافے کی تجویز

ملک بھر میں یکم اگست سے پیٹرولیم مصنوعات میں سات روپے فی لیٹر اضافے کا امکان ہے۔ آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی ( اوگرا ) کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات میں اضافے کی سمری وزارت خزانہ کو ارسال کر دی گئی ہے جس مطابق یکم اگست سے پیٹرولیم مصنوعات سات روپے فی لیٹر تک مہنگی کرنے کی سفارش کی گئی ہے جب کہ سمری میں جنرل سیلز ٹیکس ( جی ایس ٹی ) کے دو مختلف ریٹس کے مطابق قیمت بڑھانے کی تجویز دی گئی ہے۔

جی ایس ٹی کی موجودہ شرح کے مطابق پیٹرول دو روپے 45 پیسے فی لیٹر مہنگا ہونے کا امکان ہے جبکہ ہائی اسپیڈ ڈیزل دو روپے 70 پیسے، مٹی کا تیل تین روپے 25 پیسے اور لائٹ ڈیزل تین روپے 40 پیسے مہنگا کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔

اوگرا کی جانب سے بھیجی گئی سمری میں تجویز دی گئی ہے کہ اگر یکم جولائی 2018 والی سیلز ٹیکس کی شرح لاگو ہو تو قیمتوں میں 7 روپے 40 پیسے فی لیٹر تک اضافہ کیا جا سکتا ہے۔ نگراں حکومت کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا حتمی فیصلہ 31 جولائی کو کیا جائے گا جس کے بعد نئی قیمتوں کا اطلاق یکم اگست سے کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں

براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری میں 2 ماہ میں 58 فیصد تک کمی

براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری میں 2 ماہ میں 58 فیصد تک کمی

کراچی: اسٹیٹ بینک کی جانب سے جاری ہونے والے ڈیٹا کے مطابق جولائی اور اگست …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے