الیکشن پر شدید تحفظات ہیں،4 روز گزرنے کے باوجود نتائج مکمل نہیں ہوئے،گورنر سندھ

کراچی : گورنر سندھ محمد زبیر نے کہا ہے کہ ہمیں الیکشن پر شدید تحفظات ہیںجن کو ریکارڈ پر لانا ضروری ہے،4 روز گزرنے کے باوجود الیکشن کے نتائج ابھی تک مکمل نہیں ہوئے ۔پریس کانفرنس کے دوران گورنر کے عہدے سے مستعفی ہونے کا اعلان کرتے ہوئے محمد زبیر نے کہا کہ کوئی شک نہیں، الیکشن ایک پارٹی کو جتوانے کیلئے کروائے گئے ،پشاور سے کراچی تک کاﺅنٹنگ کو مینج کیا گیا،ہزاروں موبائل کلپس موجودہیں جن میں کاو¿نٹنگ کیلئے ڈکٹیٹ کیاگیاانہوںنے کہا کہ موبائل فون کی اجازت نہیں تھی لیکن وڈیو کلپ سامنے آئیں ، الیکشن کمیشن کو 8بجے بتاناچاہئے تھاکہ آرٹی ایس سسٹم بیٹھ گیاہے،اپنی زندگی میں ایسے الیکشن نہیں دیکھے،گورنر سندھ نے کہا کہ کہیں دوبارہ ووٹوں کی گنتی کی اجازت دی جا رہی ہے اور کہیں نہیں دی جا رہی ۔محمد زبیر نے کہا کہ گورنر دوسری حکومت کیساتھ بھی رہ سکتا ہے،اگر الیکشن ہو جائیں تو گورنر کو ویسے ہی عہدے پر نہیں رہنا چاہئے۔گورنر سندھ نے کہا کہ کوئی شک نہیں الیکشن کو مینج کیا گیا،الیکشن سے پہلے جوڑ توڑ کی گئی ،سینٹ میں صادق سنجرانی کو چیئرمین بنایا گیاکیا یہ اس پر فخر کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں

سندھ میں 105 ملین ڈالرز کی لاگت سے سندھ سولر انرجی پروجیکٹ

سندھ میں 105 ملین ڈالرز کی لاگت سے سندھ سولر انرجی پروجیکٹ

کراچی: وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ کی موجودگی میں نجی کمپنیوں کے ساتھ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے