اجتماعی خودکشی کی کوشش کرنے والی پانچوں لڑکیاں دم توڑ گئیں

سال کی ثنااور 14 سال کی نادیہ ہولی فیملی ہسپتال میں زیر علاج تھیں تاہم ان کی جان بچانے کی کوششیں بار آور نہ ہوسکیں اور وہ دوران علاج چل بسیں۔ واضح رہے کہ اجتماعی خودکشی کا واقعہ اٹک کے علاقے تکبیرکالونی میں پیش آیا تھا جہاں 5خانہ بدوش لڑکیوں نے معمولی جھگڑے پر زہریلی دوا کھالی تھی جس کے نتیجے میں تمام لڑکیوں کو اسفند یارشہید ہسپتال لایا گیا جہاں تین لڑکیاں موقع پر ہی دم توڑ گئی تھیں جبکہ ثنا اور نادیہ کو تشویشناک حالت میں ہولی فیملی ہسپتال منتقل کیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستانی میڈیا ایک طاقتور میڈیم ہونے کے باوجود اب بھی کمزور ہے

پاکستانی میڈیا ایک طاقتور میڈیم ہونے کے باوجود اب بھی کمزور ہے

اسلام آباد: پاکستانی میڈیا کے چار میں سے تین میڈیمز میں جو میڈیا ہاؤسز پچاس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے