بلوچستان: انتخابی عملےکی حفاظت پرمامورٹیم پرحملہ، تین اہلکار شہید

بلوچستان میں پاک ایران سرحد کے قریب انتخابی عملے کی سیکیورٹی پر مامور اہلکاروں کی ٹیم پر حملے کے نتیجے میں 3 سپاہی شہید ہو گئے۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کی جانب جاری بیان کے مطابق گزشتہ رات قومی اسمبلی کے حلقے این اے 271 کے پولنگ عملے کی سیکیورٹی پر مامور اہلکاروں پر پاک ایران سرحد کے قریب دشتک کے علاقے میں حملہ کیا گیا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق سیکیورٹی کانوائے پر زمان ماؤنٹین رینج کے علاقے میں الیکشن کے عمل کو متاثر کرنے کے لیے حملہ کیا گیا لیکن سیکیورٹی فورسز نے حملے کو ناکام بنا کر پولنگ عملے کو ان کے مقام تک پہنچانا یقینی بنایا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق دہشت گردوں کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں تین اہلکار شہید ہوئے جن کی شناخت سپاہی عمران، سپاہی جہانزیب اور سپاہی اکمل کے ناموں سے ہوئی ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق حملے میں پولنگ ٹیم کے اسکول ٹیچر سیف اللہ بھی شہید ہوئے جب کہ 10 سیکیورٹی اہلکاروں سمیت 14 افراد زخمی بھی ہوئے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق حملے کے 10 شدید زخمیوں کو کراچی منتقل کر دیا گیا ہے جب کہ معمولی زخمیوں کو ڈی ایچ کیو تربت میں طبی امداد کے بعد دسچارج کر دیا گیا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق آج این اے 271 بلیدو میں پولنگ کا عمل جاری ہے۔

یہ بھی پڑھیں

اپوزیشن, کاحق, ہے کہ وہ, حکومت کی تبدیلی کی بات, کرے

اپوزیشن کاحق ہے کہ وہ حکومت کی تبدیلی کی بات کرے

کوئٹہ: جام کمال نے کہا کہ اپوزیشن کاحق ہے کہ وہ حکومت کی تبدیلی کی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے