روسی مفادات کیلئے خاتون خفیہ ایجنٹ نے امریکیوں کو اپنی سب سے قیمتی چیز پیش کردی

واشنگٹن: امریکہ  میں کام کرنیوالی خفیہ ایجنٹ روسی خاتون کو گرفتار کیا گیا ہے اس پر الزام ہے کہ وہ امریکیوں کو جسم پیش کرکے روس کے لئے بھی خفیہ معلومات اکٹھی کرتی رہی ہے۔ نیویارک ٹائمز کے مطابق ماریا بوٹینا پر الزام ہے کہ ماسکو کی ایما پر امریکہ میں خفیہ ایجنٹ کا کردار ادا کرتی رہی ہے اور اب بھی ایک اعلیٰ روسی انٹیلی جنس آفیسر کے ساتھ امریکہ کے خلاف ساشوں کیلئے رابطے میں تھی۔ پراسیکیوٹر ز کے مطابق 29سالہ ماریا امریکہ میں دوہری زندگی گزار رہی تھی ۔

اس نے امریکن یونیورسٹی سے تعلیم حاصل کی اور امریکی میں قیام کرلیا لیکن خفیہ طور پر ماسکو میں اعلیٰ روسی افسران سے رابطے  میں رہی اور امریکیوں سے رومانس لڑانا بطور مشغلہ اپنا لیا ۔ اس نے اپنی تنظیم کے مفادات حاصل کرنے کیلئے ایک اہم پوزیشن کے حصول کے لئے ایک امریکی کو اپنا جسم پیش کیا ۔اس پر پیسہ ملک سے باہر بھیجنے کے بھی الزامات ہیں۔ ماریا کو اتوار کو واشنگٹن سے گرفتار کیا گیا اورپراسیکیوٹر ز کی جانب سے اس پر روس کے لئے ایک غیر رجسٹرڈ خفیہ ایجنٹ کے طور پر کام کرنے کا الزام لگایاگیا ہے ۔

یہ بھی پڑھیں

حوثی باغیوں کی جانب سے ابہا ائیرپورٹ پر حملہ قابل مذمت ہے، شیخ عبدالرحمان السدیس

حوثی باغیوں کی جانب سے ابہا ائیرپورٹ پر حملہ قابل مذمت ہے، شیخ عبدالرحمان السدیس

صدر عام برائے امور مسجد حرام و مسجد نبویﷺ شیخ ڈاکٹر عبدالرحمان بن عبدالعزیز السدیس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے