بلوچستان کے شہر چمن سے سینیئر ڈاکٹر اغوا

مغوی ڈاکٹر غلام محمد چمن میں ریلوے ہسپتال میں کام کر رہے تھے۔

چمن میں پولیس کے ایک اہلکار نے اس واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ ڈاکٹر غلام محمد کو چمن ہسپتال کے باہر سے نامعلوم افراد نے گن پوائنٹ پر اغوا کیا۔

اہلکار کا کہنا تھاکہ اغوا کاروں کی تعداد چھ تھی جو کہ ڈاکٹر کو اغوا کرنے کے بعد ایک گاڑی میں نامعلوم مقام کی جانب لے گئے۔

چمن سے جون کے مہینے میں بھی تاجروں کے اغوا کے واقعات پیش آئے تھے جس کے خلاف تاجروں نے کوئٹہ چمن شاہراہ کو بھی بند کیا تھا۔

پیر کو اغوا ہونے والے ڈاکٹر غلام محمد ریلوے ہسپتال چمن کے انچارج تھے اور وہ وہاں طویل عرصے سے کام کررہے تھے۔ تاحال ڈاکٹر کو اغوا کرنے کے محرکات معلوم نہیں ہوسکے۔

پولیس اہلکار نے بتایا کہ ڈاکٹر کے اغوا کا مقدمہ نامعلوم افراد کے خلاف درج کرکے تحقیقات شروع کردی گئی ہیں۔

چمن کوئٹہ شہر سے شمال میں اندازاً 130 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔

یہ بھی پڑھیں

بلوچستان, میں ہر سال تھیلیسیمیا, کے 2 ہزار, نئےکیسز سامنے, آرہے ہیں

بلوچستان میں ہر سال تھیلیسیمیا کے 2 ہزار نئےکیسز سامنے آرہے ہیں

کوئٹہ: صوبے میں تھیلیسیمیا کے بڑھتے کیسز کے باعث ایک خاندان کے چار افراد بھی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے