41 سالہ آدمی کی 11 سالہ بچی سے شادی نے ہنگامہ برپاکردیا، دولہا کی پہلے ہی کتنی بیویاں ہیں؟ جان کر مردوں کوبھی یقین نہ آئے کہ یہ بھی ممکن ہے

کوالا لمپور: کم عمری کی شادی ایک ایسا مسئلہ ہے جو بالخصوص مشرقی ممالک میں عام پایا جاتا ہے۔بعض اوقات تو اتنی کم عمر لڑکیوں کی شادی کر دی جاتی ہے کہ جنہیں شادی کا مطلب بھی معلوم نہیں ہوتا۔ ایک ایسا ہی افسوسناک واقعہ ملائشیا میں پیش آیا جہاں ایک 41 سالہ شخص نے 11 سالہ بچی سے شادی کر لی۔ اس بدبخت کی ہوس کا اندازہ کیجئے کہ پہلے ہی اس کے گھر میں دو بیویاں ہیں جن سے وہ چھ بچے بھی پیدا کر چکا ہے۔ بچوں کی عمریں پانچ سے 18 سال کے درمیان ہیں، اور ایسے میں اس شیطان صفت نے 11 سال کی بچی سے شادی کر لی ہے۔مقامی اخبار ’’بورنیو نیوز‘‘ کے مطابق چی عبدالکریم نامی یہ شخص ایک مالدار کباڑیہ ہے جبکہ لڑکی کے والدین بہت غریب ہیں۔ یہ اندازہ لگانا مشکل نہیں کہ اس بچی کے والدین صرف غریب ہی نہیں بلکہ بے حس بھی ہیں۔ غربت کا یہ مطلب ہرگز نہیں کہ آپ اپنی کمسن بچی کو ایک ادھیڑ عمر شخص کی عیاشی کا ساماں بنا دیں۔ ایسے والدین کو یہ ضرور سوچنا چاہیے کہ جس شخص کی پہلے ہی دو بیویاں اور چھ بچے ہیں وہ آپ کی کمسن بیٹی کا ہاتھ کیوں مانگ رہا ہے۔شادی کے نام پر اس کھلی بے حیائی نے ملک میں ایک ہنگامے کی سی فضاء پیدا کر دی ہے۔ سوشل میڈیا پر ہر کوئی اس شیطان صفت شخص کی مزمت کر رہا ہے۔ بات اقوام متحدہ تک جا پہنچی ہے جس کے ذیلی ادارے یونیسف کے مقامی نمائندے کلارک ہیٹنگ کا کہنا تھا کہ ’’یہ صدمہ خیز اور ناقابل قبول ہے اور بچی کے حق میں اچھا نہیں۔یہ اس کے حقوق کی خلاف ورزی ہے۔‘‘

یہ بھی پڑھیں

حوثی باغیوں کی جانب سے ابہا ائیرپورٹ پر حملہ قابل مذمت ہے، شیخ عبدالرحمان السدیس

حوثی باغیوں کی جانب سے ابہا ائیرپورٹ پر حملہ قابل مذمت ہے، شیخ عبدالرحمان السدیس

صدر عام برائے امور مسجد حرام و مسجد نبویﷺ شیخ ڈاکٹر عبدالرحمان بن عبدالعزیز السدیس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے