کراچی میں نگلیریا ایک بار پھر سر اٹھانے لگا، 2 افراد جاں بحق

کراچی کے علاقے گلشن اقبال کا سترہ سالہ رہائشی احمد نگلیریا کے باعث گذشتہ روز اسپتال میں دم توڑ گیا، احمد کے خون کے طبی معائنے کے بعد اس میں نگلیریا کے مرض کی تشخیص کی گئی تھی۔

اس سے قبل جان لیوا جراثیم نے یکم جولائی کو تیس سالہ نوجوان زاہد کا شکار کیا تھا۔

اس کے باوجود محکمہ صحت سندھ اور واٹر بورڈ کی جانب سے پانی میں کلورین کی مقدار ملانے کے لئے خاطر خواہ اقدامات نہیں کئے جارہے ہیں ۔

یاد رہے کہ گذشتہ سال شہر میں نگلیریا سے چودہ افراد جاں بحق ہوگئے تھے۔

واضح رہے کہ نگلیریا پانی میں کلورین شامل نہ ہونے کے باعث پیدا ہوتا ہے ،نگلیریا کا وائرس ناک کے ذریعے داخل ہو کر دماغ کو کھا جاتا ہے ، 3 سے 7 دن کے اندر مرض کی تشخیص ہوتی ہے، ماہرین کا کہنا ہے کہ اس وائرس میں مبتلا 99.9فیصد مریضوں کا بچنا مشکل ہوتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

لوڈ شیڈنگ سے مستثنیٰ علاقوں میں فنی خرابی اور لوڈ مینجمنٹ کے نام پر لوڈ شیڈنگ شروع

لوڈ شیڈنگ سے مستثنیٰ علاقوں میں فنی خرابی اور لوڈ مینجمنٹ کے نام پر لوڈ شیڈنگ شروع

کراچی: کراچی کے مختلف علاقوں میں بدترین لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے، کے الیکٹرک …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے