وڈیرہ شاہی کے جبروستم کی ایک اور داستان، بے جرم نوجوان مزدوروں کےجسموں پہ رقم ہوئی، صرف پاکستان ویوز پہ، تفصیل جان کر آپ بھی چیخ۔۔۔۔

زرعی زمینوں پر زبردستی کام کرنے سے انکار. حجرہ شاہ مقیم میں وڈیرہ شاہی نے ظلم کی داستان رقم کر دی۔ تھانہ حجرہ شاہ مقیم کے نواحی گاؤں جیٹھ پورمیں زرعی زمینوں پر زبردستی کام کرنے سے انکار کرنے پر وڈیرے زمینداروں چوہدری اسلم، حنیف، محمد دین بمعہ 10 افراد نے مقامی مزدوروں ساجد، شرافت پسران نور محمد چھینبہ کو انکے گھر سے اٹھا لیا اور گلے میں پھندے ڈال کر گاوں میں گھسیٹتے ہوئے اپنے ڈیرہ پر لے جاکر انسانیت سوز تشدد کا نشانہ بنایا۔ساجد، شرافت پسران نور محمد چھینبہ پر تشدد وجہ عناد یہ کہ ظلم کا نشانہ بننے والے دونوں بھائیوں نے چوہدری اسلم وغیرہ کی زرعی زمینوں پر زبردستی کام کرنے سے انکار کردیا تھا جس رنج اور چودھراہٹ کی توہین محسوس کرتے ہوئے وڈیرے حیوانیت پر اتر آئے۔مقامی پولیس اطلاع پاکر موقع پر پہنچی تو سفاک ملزمان فرار ہو گئے پولیس نے ذخمیوں کو تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال پہنچایا تفتیشی تھانیدار خالد محمود بھٹی نے صحافیوں کو بتایا کہ میڈیکل رپورٹ کی روشنی میں ہی قانونی کاروائی کی جائے گی ڈی ایس پی سرکل دیپالپور چوہدری انعام الحق نے استفسار پر کہا کہ جلد مقدمہ درج کر کے ملزمان کو گرفتار کر لیا جائے گا، دلخراش واقعہ ہر علاقہ میں تشویش پھیل گئی

یہ بھی پڑھیں

چترال میں بروغل کے مقام پر 5 برطانوی کوہ پیما حادثے کا شکار

چترال میں بروغل کے مقام پر 5 برطانوی کوہ پیما حادثے کا شکار

چترال: ضلعی انتظامیہ کے مطابق کوہ پیما چترال کے دورافتادہ علاقے بروغل میں کھویو نامی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے