انیس قائمخانی کی ایک اور مقدمے میں گرفتاری کی اجازت

حیدر آباد پولیس بھی پاک سر زمین پارٹی کے رہنما انیس قائمخانی کیخلاف اپنا مقدمہ لے کر اے ٹی سی پہنچ گئی، دہشت گردی کی عدالت نے حیدر آباد پولیس کو گرفتاری کی اجازت دیدی ہے، انیس کے خلاف 1994 میں کینٹ حیدر آباد میں مقدمہ درج ہوا تھا، جس میں انیس قائمخانی پر فائرنگ اور گاڑیاں جلانے کی دفعات شامل ہیں۔

واضح رہے کہ انیس قائمخانی دہشت گردوں کے علاج کی سہولت کیس میں پہلے سے گرفتار ہے۔

یاد  رہے کہ 19 جولائی کو انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے انیس قائمخانی کی درخواست ضمانت مسترد کر دی تھی، جس کے بعد انہیں حراست میں لے لیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستان کا 72 واں جشن آزادی

ملک بھر میں جشن آزادی ملی جوش و جذبے کے ساتھ منایا جارہا ہے آج …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے