این اے 53 ، عمران خان کے کاغذات نامزدگی کیخلاف درخواست پر فیصلہ محفوظ،کچھ دیر میں سنایا جائےگا

اسلام آباد:ریٹرننگ افسر نے این اے 53 سے عمران خان کے کاغذات نامزدگی پر اعتراضات پر فیصلہ محفوظ کر لیا جو کچھ دیر میں سنائے جانے کا امکان ہے۔

تفصیلات کے مطابق این اے 53 سے عمران خان کے کا غذات نامزدگی پر اعتراضات کی سماعت کے دوران بابر اعوان اور درخواست گزار عبدالوہاب کے وکیل عدالت میں پیش ہوئے،دلائل کے دوران بابر اعوان نے اعتراضات کو الزام قرار دیتے ہوئے ان کا جواب دینے کے بجائے امریکی عدالت اور دیگر کو نام نہاد قرار دے ڈالا۔بابر اعوان کا کہنا تھا کہ تین نام نہاد الزامات لگائے گے ہیں ان کی کوئی قانونی حیثیت نہیں، یہ اعتراضات نہیں الزامات ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ اعتراضات تین بنیادوں پر لگائے گے ہیں۔

عمران خان کے وکیل کا کہنا تھا کہ امریکہ کی نام نہاد عدالت کا فیصلہ بتانے کے لیے ایسے اخبار کے تراشے پیش کیے گئے ہیں جسے ہم نہیں جانتے نہ کوئی ثبوت ہیں۔انہوں نے کہا کہ اعتراضات کی تیسری بنیاد ٹویٹ کو بنایا گیا ہے، آج کل کوئی بھی مشہور شخصیت کا فیک ٹویٹر اکاونٹ بنا کر ٹویٹ کرسکتا ہے۔ بابر اعوان کا کہنا تھا کہ ثبوت کے طور پر پیش کئے جانے والے کاغذات تصدیق شدہ نہیں ہیں، یہ اخبار کے تراشوں کی فوٹو اسٹیٹ کاپیاں ہیں، ان اخباروں کے تراشے ہیں جنہیں کوئی نہیں جانتا۔

اپنے دلائل کے دوران عمران خان کے وکیل بابر اعوان نے آرٹیکل 62 قانون شہادت آرڈیننس پڑھ کر سنایا۔ ان کا کہنا تھا کہ عمران خان کے خلاف اعتراضات غیر تصدیق شدہ ہیں۔ قانون شہادت آرڈیننس میں بیرون ملک سے دستاویزات منگوانے یا بھیجنے کا طریقہ کار موجود ہے۔بابر اعوان نے دعویٰ کیا کہ عمران خان کےخلاف اعتراضات جعل سازی اور دھوکہ دہی پر مبنی ہیں۔آر او سے استدعا کی جاتی ہے کہ عمران خان پر عائد اعتراضات مسترد کئے جائیں اور ان کے کاغذات نامزدگی منظور کئے جائیں، ریٹرننگ افسر نے دلائل سننے کے بعد درخواست پر فیصلہ محفوظ کر لیا جو کچھ دیر میں سنایا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں

عمران خان نے وفد کے ہمراہ مسجد نبوی میں روضہ ر سولؐ پر حاضری دی

عمران خان نے وفد کے ہمراہ مسجد نبوی میں روضہ ر سولؐ پر حاضری دی

مدینہ منورہ: وزیراعظم عمران خان سعودی قیادت سے مشاورتی عمل کے بعد وفد کے ہمراہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے