بھائی کے قتل کے ذمہ دار بی جے پی کے لیڈر ہیں، ڈاکٹر کفیل

ڈاکٹر کفیل خان کے بھائی کاشف جمیل پر ہندو انتہا پسندوں کی جانب سے ہوئے قاتلانہ حملے کے معاملے میں متاثرہ خاندان نے بی جے پی کے لیڈر پر سنگین الزام عائد کئے ہیں۔ یوپی میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے ڈاکٹر کفیل خان نے یوپی حکومت اور ریاستی پولیس پر شکوک و شبہات ظاہر کرتے ہوئے اس کیس میں سی بی آئی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔
ڈاکٹر کفیل خان کے چھوٹے بھائی کاشف جمیل پر دس جون کو ’’گورکھ ناتھ مندر‘‘ سے کچھ دوری پر قاتلانہ حملہ ہوا تھا۔ وہ دیر رات تقریباً دس بجے کسی شخصی کام سے گھر واپس لوٹ رہے تھے۔ اس حملے میں کاشف جمیل کو تین گولیاں لگیں تھیں۔ اس حملے کو ایک ہفتہ گزر چکا ہے۔ اب تک پولیس نے اس معاملے میں کسی کو بھی گرفتار نہیں کیا ہے، جس کی وجہ سے متاثرہ خاندان اترپردیش پولیس پر سوال اٹھا رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

وادی نیلم سیلابی ریلے کے نیتجے میں کم از کم 22 افراد لاپتہ جبکہ پانچ زخمی

وادی نیلم سیلابی ریلے کے نیتجے میں کم از کم 22 افراد لاپتہ جبکہ پانچ زخمی

نیلم: یہ علاقہ پاکستان کے زیرِ انتظام کشمیر کے دارالحکومت مظفر آباد سے تقریباً 60 …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے